site
stats
پاکستان

میاں منشا منی لانڈرنگ کیس: سماعت 22 دسمبر تک ملتوی

اسلام آباد : منی لانڈرنگ کیس کی سماعت میں میاں منشا نے بالاخر تسلیم کرلیا کہ سینٹ جیمز ہوٹل ان کے اپنے خاندان کی ملکیت ہے۔

تفصیلات کے مطابق آج بروز جمعرات اسلام آباد ہائی کورٹ میں میاں منشا کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی جس کے دوران میاں منشا نے سینٹ جیمز ہوٹل اپنے بچوں کا ہونے اعتراف کرلیا۔

میاں منشا کے خلاف مقدمے کی سماعت جسٹس شوکت عزیزصدیقی اور جسٹس محسن کیانی پر مشتمل دورکنی بنچ نے کی۔

عدالت کے بار بار نوٹسسز کے بعد آج جمع کروائے گئے جواب میں میاں منشا نے تسلیم کیا سینٹ جیمز ہوٹل کے مالک ان کے بچے ہیں۔

بیرسٹر شعیب رزاق کا کہنا تھا کہ میاں منشا نے ساٹھ ملین پاونڈ پاکستان سے برطانیہ غیرقانونی طریقے سے منتقل کئے ہیں‘ وہ اور ان کے وکیل گیارہ ماہ سے تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں۔

آج کی کارروائی میں اسٹیٹ بینک‘ نیب ، ایف بی آر‘ میاں منشا اور ان کےبچوں کے وکیل عدالت میں پیش ہوئے ۔عدالت نے کیس کی سماعت بائیس دسمبر تک ملتوی کردی۔

استغاثہ کا کہنا ہے میاں منشا نے 6 کروڑ پاؤنڈ غیرقانونی طور پر برطانیہ منتقل کیے۔ مقدمے کی سماعت کے موقع پر میاں منشا نے کیس میں فریق بننے کی درخواست بھی دی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top