The news is by your side.

Advertisement

ن لیگ دور میں سرکاری خزانے سے پی ٹی آئی کیخلاف اشتہارات دیئے گئے، میاں اسلم اقبال

لاہور : صوبائی وزیر اطلاعات میاں اسلم اقبال نے کہا ہے کہ پنجاب میں ن لیگ نے2009میں بلدیاتی ادارے ختم کیے، حکومتی خزانے سے پی ٹی آئی کیخلاف اشتہارات دیئے گئے، اپوزیشن کو پرامن احتجاج یا مارچ کا حق دیں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ اورنج لائن منصوبے میں رقم کی ادائیگیوں کی وجہ سے تاخیر تھی۔

اس منصوبے کی رقم ہماری حکومت ادا کررہی ہے، وزیراعلیٰ پنجاب کسی منسٹری میں مداخلت نہیں کررہے، کابینہ میں متعلقہ منسٹربریفنگ اور ٹارگٹ سیٹ کرتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ن لیگ دور میں حکومتی خزانے سے پی ٹی آئی کیخلاف ٹی وی اور اخبارات کو کروڑوں روپے اشتہارات دیئے گئے، جن میں،55سے58کروڑ روپے ہم نے دیئے مزید ادا کیے جارہے ہیں۔

پنجاب میں ن لیگ نے2009میں بلدیاتی ادارے ختم کیے، پنجاب میں ن لیگ نے2015میں بلدیاتی انتخابات کرائے، بلدیاتی انتخابات کے بعد دو سال بعد بھی اختیارات نہیں دیئے، ن لیگ نے آخری سال میں بلدیاتی اداروں کو اختیارات دیئے۔

ڈینگی کے حوالے سے میاں اسلم اقبال نے کہا کہ2017میں1100کنفرم ڈینگی کیسزرپورٹ ہوئےتھے،2018میں بھی کنفرم ڈینگی کیسزکی1100کےلگ بھگ تعدادتھی،2017میں لاہورمیں 1100کنفرم ڈینگی کیسزرپورٹ ہوئےتھے،2018میں لاہورمٰں کنفرم ڈینگی کیسزکی1100تعدادتھی،2019میں لاہورمیں کنفرم ڈینگی کیسزکی تعداد130تھی،130کنفرم کیسزمیں سے100اپنےگھروں کو واپس جا چکے ہیں۔

صوبائی وزیر اطلاعات کا مزید کہنا تھا کہ پنجاب حکومت کی اپنی پالیسی ہے اپوزیشن کو پرامن احتجاج یا مارچ کاحق دیں گے۔

مزید پڑھیں: حکومت میں نقص نکالنے والی ن لیگ کو کرپشن ختم ہو جانے کا غم ہے، میاں اسلم اقبال

کے پی یا وفاق کی سطح پر ان کی اپنی پالیسی ہے ہم پنجاب میں سہولت دیں گے لیکن مظاہرین اگر اداروں کےخلاف گفتگو کریں گے تو قانون حرکت میں آئے گا، میاں اسلم اقبال نے کہا کہ پنجاب پولیس اب دامادوں، بیٹوں اورنواسوں کو پروٹوکول نہیں دے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں