The news is by your side.

Advertisement

عمران خان کے ہاتھ میں وزیر اعظم بننے کی لکیر نہیں، میاں افتخارحسین

چارسدہ: عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ عمران خان کے ہاتھ میں وزیر اعظم بننے کی لکیر ہی نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق اے این پی کے رہنما نے چارسدہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے گیارہ نکات ایسے بیان کیے جیسے خود بھی اس پرعمل کیا ہو، تحریک انصاف کی حکومت نے خیبر پختونخوا کو تباہ کردیا ہے۔

انھوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختون خوا پرویز خٹک پر کرپشن کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ انھوں نے بی آر ٹی پروجیکٹ میں تین ارب روپے کمیشن لیا جس پر نیب نے ان کے خلاف کرپشن کی تحقیقات شروع کردی ہے۔

میاں افتخار حسین نے ایک ارب درخت لگانے کے منصوبے کے بارے میں کہا کہ اس میں اربوں روپے کی کرپشن ہوئی ہے اور فی پودہ آٹھ روپے کی کرپشن کی گئی ہے، صوبے کا وزیراعلیٰ اور وزرا کرپٹ ہیں۔

اے این پی کے رہنما نے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خیبرپختونخوا میں تمام تعلیمی ادارے تباہ کردیے گئے ہیں، جب کہ محکمہ صحت کی کارکردگی کا پول چیف جسٹس نے کھول دیا۔

عمران خان نے 5 سال میں خیبر پختونخوا کا حال برا کردیا ہے، امیر مقام

واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کی طرف سے بھی خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی حکومت پر تنقید ہوتی رہی ہے، ایک ہفتہ قبل ن لیگ کے رہنما امیر مقام نے پشاور میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ تحریک انصاف نے پانچ سال میں صوبے کا برا حال کردیا ہے۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخواہ عدالت میں پیش، چیف جسٹس کا کارکردگی پرعدم اطمینان

دس دن قبل بھی سپریم کورٹ پشاور رجسٹری میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کے حکم پر پرویز خٹک کو پیش ہونا پڑا تھا، حکومت کی کارکردگی کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے صوبے میں صحت، تعلیم، آلودہ پانی کے حوالے سے کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کردیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں