میاں منشا سے متعلق ایک اوراسکینڈل کا انکشاف ARYNews.tv Breaking News
The news is by your side.

Advertisement

میاں منشا سے متعلق ایک اوراسکینڈل کا انکشاف

اسلام آباد : سینٹ جیمز ہوٹل کی خریداری کے بعد سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس میں میاں منشا کے حوالے سے ایک اور اسکینڈل سامنے آگیا، عدالتی احکامات کے باوجود نجم قریشی نامی شخص کے 4 ملین پاؤنڈز ہڑپ کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ممتاز صنعت کار اور حکومت کی اہم ترین شخصیت کے قریبی دوست میاں منشا سے متعلق ایک اور اسکینڈل کا انکشاف ہوا ہے۔

سینیٹر سلیم مانڈوی والا کی زیر صدارت ہونے والے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس میں نجم قریشی نامی 74 سالہ معذور شخص نے بتایا کہ اس کے ایم سی بی بینک پر4 ملین پاؤنڈز واجب الادا ہیں۔

نجم قریشی کے مطابق انہوں نے مین ہٹن چیز بینک میں 1989 میں ایک لاکھ 50 ہزار برطانوی پاؤنڈز ڈپازٹ کرائے تھے لیکن جب ایم سی بی نے مین ہٹن چیز بینک کے پاکستان آپریشنز 1993 میں خرید لیے تو اس کے بعد تو اس بعد ان کی رقم پھنس گئی۔

ایم سی بی کے خلاف 6 سال 8 ماہ کی قانونی جنگ کے بعد نجم قریشی نے 1998 میں کیس تو جیت لیا اپنی رقم نہ حاصل کرسکے۔

مزید پڑھیں : میاں منشا منی لانڈرنگ کیس: سماعت 22 دسمبر تک ملتوی

رواں سال جنوری میں بھی چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے نجم قریشی کے حق میں فیصلہ دیا۔ لیکن عدالت کے واضح احکامات کے باوجود ایم سی بی بینک اب اب لور کورٹس اور دیگر تاخیری حربے استعمال کرکے ان کی رقم ہڑپ کرنا چاہتا ہے۔

نجم قریشی کا کہنا ہے کہ ان کی اصل رقم اور اس پر سود ملا کر ایم سی بی بینک پر 4 ملین پاؤنڈز واجب الادا ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں