The news is by your side.

Advertisement

تنزانیہ میں بارودی سرنگیں تلاش کرنے والے چوہے

تنزانیہ کی ایک تنظیم نے بارودی سرنگوں اور ٹی بی مریضوں کا پتہ لگانے کےلیے بڑی جسامت والے چوہوں سے مدد لینا شروع کردی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق افریقی ملک تنزانیہ میں مختلف سماجی کاموں جیسے کسانوں کی فلاح و بہبود، بارودی سرنگوں سے حفاظت اور ان دھماکوں سے معذور ہوجانے والے لوگوں کی بحالی بطورِ خاص کام کرنے والی تنظیم ‘اپوپو’ شامل ہیں۔

تنزانیہ اور دوسرے افریقی ممالک میں مسلسل بغاوتوں اور خانہ جنگی کے باعث ان گنت بارودی سرنگیں جگہ جگہ دفن ہیں جو معصوم بچوں اور عام لوگوں کی بڑی تعداد کو ہلاک کرنے کے علاوہ انہیں زندگی بھر کےلیے معذور بھی کررہی ہیں۔

بارودی سرنگوں کا پتہ لگانے کےلیے کتے کو تربیت دی جاتی ہے جس پر لاکھوں ڈالرز خرچہ ہوتا ہے جو غریب ممالک کےلیے مشکل ہے، اوپوپو تنظیم نے تربیت یافتہ کتوں کا متبادل چوہوں کو قرار دیا اور انہیں بارودی سرنگیں ڈھونڈنے کی تربیت دی اور کام شروع کردیا۔

ان چوہوں کی لمبائی ڈیڑھ فٹ سے کچھ کم ہوتی ہے جب کہ ان کی عمر 8 برس تک ہوتی ہے۔

اوپوپو نے چوہوں سے بارودی سرنگوں کی تلاش کا کامیاب تجربہ کرکے چوہوں کو سستے داموں فروخت کرنا شروع کردیا، جس کے باعث اب تک تنزانیہ میں ہزاروں جانیں بچائی جاچکی ہیں۔

بارودی سرنگیں تلاش کرنے والے چوہوں کو تنزانیہ میں ‘ہیرو چوہے’ کے لقب سے نوازا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں