site
stats
عالمی خبریں

میرے والد کو قتل کیا گیا ، مائیکل جیکسن کی بیٹی کا انکشاف

نیویارک : کنگ آف پاپ آنجہانی مائیکل جیکسن کی بیٹی پیرس جیکسن نے انکشاف کیا ہے کہ میرے والد کو قتل کیا گیا ہے۔

غیر ملکی ویب سائٹ کے مطابق مائیکل جیکسن کی بیٹی پیرس جیکسن نے ایک میگزین کو انٹرویو میں انکشاف کیا ہے کہ ان کے والد کو قتل کیا گیا، ان کے والد نے کہا تھا کہ ایک دن انہیں قتل کر دیا جائے گا اور انہیں مار کر اسے طبعی موت کا نام دے دیا گیا۔

پیرس کا کہنا تھا کہ لوگ سمجھتے ہیں کہ میں کسی سازش کی بات کر رہی ہیں لیکن حقیقت یہی ہے، ان کے خاندان کے افراد کو بھی اس قتل کے بارے میں علم تھا۔

jackson-post-1

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر کونار ڈمرے سزا وار ہیں مگر مائیکل جیکسن کی موت کے پیچھے کچھ اور برے عوامل تھے۔

خیال رہے کہ پیرس جیکسن صرف 11 سال کی تھی ، جب 2009 مائیکل جیکسن کی موت نشہ آور دوائی کی زیادہ مقدار لینے کے وجہ سے دل کا دورہ پڑا تھا۔

واضح  رہے کہ مائیکل جیکسن پچیس جون 2009 کو خواب آور دوا کی زائد مقدار استعمال کرنے کے باعث انتقال کر گئے تھے اور عدالت نے مائیکل جیکسن کے ڈاکٹر کونار ڈمرے مجرم قرار دیتے ہوئے چار برس قید کی سزا بھی دی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top