The news is by your side.

Advertisement

فکسنگ کی وجہ سے کھلاڑیو ں کا ضیاع افسوس ناک ہے: مکی آرتھر

کراچی: پاکستانی کرکٹ ٹیم کے ہیڈکوچ مکی آرتھرکا کہناہےکہ پیسے کی لالچ لےڈوبتی ہے۔انہوں نےاسپاٹ فکسنگ کی وجہ لالچ کوقراردیاہے۔

تفصیلات کےمطابق دورہ ویسٹ انڈیز پرروانگی سےقبل میڈیا سے بات کرتےہوئے پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈکوچ مکی آرتھرکاکہناتھاکہ سرفرازاحمد جارحانہ طرز کی کرکٹ کے کھلاڑی ہیں ان کے آنے سے اچھے نتائج سامنےآئیں گے۔

مکی آرتھر نےکہا کہ پاکستان کی ٹیسٹ ٹیم متوازن ہےلیکن اس کی بولنگ میں بہتری کی ضرورت ہے کیونکہ حالیہ ٹیسٹ میچوں میں یہ مخالف ٹیم کی بیس وکٹیں حاصل کرنے میں ناکام رہی۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈکوچ کاکہناتھاکہ سرفراز احمد اور سابق کپتان اظہرعلی کا موازنہ نہیں کریں گے تاہم یہ ضرور ہے کہ ٹیم مجموعی طور پر اچھی کرکٹ نہیں کھیل رہی تھی۔


مزید پڑھیں:اسپاٹ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں پرتاحیات پابندی لگائی جائے‘ مصباح الحق


مکی آرتھرنے کہا کہ کھلاڑی لالچ کا شکار ہو جاتے ہیں جس کے سبب انٹرنیشنل کرکٹ کو مجموعی طور پر نقصان پہنچ رہا ہےاورحالیہ تنازع سے پاکستان کرکٹ کو دھچکا لگا ہے۔

ہیڈ کوچ نے کہا کہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی جانب سے کھلاڑیوں کو کرپشن سے دور رہنے کے حوالے سے بے پناہ لیکچرز دیے گئے اور کھلاڑیوں کو اس سلسلے میں ہرگز لاپرواہی نہیں برتنی چاہیے کیونکہ فکسنگ کی وجہ سے کھلاڑیوں کو کھونا بہت زیادہ مایوس کن ہوتا ہے۔

واضح رہےکہ پاکستان کرکٹ ٹیم اس وقت عالمی درجہ بندی میں آٹھویں اور ویسٹ انڈیز نویں نمبر پرموجود ہے اور دونوں ٹیموں کو 2019 ورلڈ کپ تک براہ راست رسائی کا چیلنج درپیش ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں