The news is by your side.

Advertisement

لیاری گینگ وارکے سرغنہ عزیر بلوچ کیخلاف ملٹری ٹرائل مکمل

کراچی : لیاری گینگ وارکے سرغنہ عزیر بلوچ کیخلاف ملٹری ٹرائل مکمل ہوگیا ، عزیربلوچ کا ملک سے غداری اوراہم راز دیگر ملکوں کو دینے کے الزام میں ملٹری ٹرائل کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق لیاری گینگ وارکے سرغنہ عزیر بلوچ کیخلاف ملٹری ٹرائل مکمل کرلیا گیا، جس کےبعد انھیں سینٹرل جیل کراچی منتقل کردیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق عزیربلوچ کوجیل پولیس نے ارشد پپوقتل اوردیگر مقدمات میں انسداددہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیا ، فاضل جج نے عزیربلوچ کےخلاف 22 اپریل کوگواہ طلب کرلئے ہیں۔

خیال رہے عزیربلوچ کے خلاف سیکیورٹی اہلکاروں سمیت درجنوں ٹارگٹ کلنگ کے مقدمات زیرسماعت ہیں۔ جبکہ ملک سے غداری اوراہم راز دیگر ملکوں کی خفیہ ایجنسیوں کو دینے کے الزام میں ملٹری ٹرائل کیا گیا۔

یاد رہے رواں سال جنوری میں سندھ ہائی کورٹ نے سانحہ بلدیہ ٹاؤن، نثار مورائی اور لیاری گینگ وار کےعزیربلوچ کی جوائنٹ انٹروگیشن رپورٹس عوام کےسامنےلانے کا حکم دیا تھا، درخواست وفاقی وزیرعلی زیدی نے دائر کی تھی۔

واضح رہے اپریل 2017 میں پاک فوج نے پاکستان آرمی ایکٹ اور آفیشل سیکریٹ ایکٹ1923 کے تحت لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیربلوچ کو اپنی تحویل میں لیا تھا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ عزیر بلوچ نے حساس سیکیورٹی معلومات غیر ملکی ایجنسیوں کو دی تھی۔ اسکے علاوہ
اس کے بھارتی ایجنسی را سمیت دیگر پاکستان مخالف قوتوں سے رابطے تھے۔

لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ نے جے آئی ٹی کے سامنے لرزہ خیز انکشافات کیے تھے۔ جس میں کہا گیا تھا کہ عزیر بلوچ نے شیر شاہ کباڑی مارکیٹ میں تاجروں کے اجتماعی قتل سمیت ایک سو ستانوے افراد کے قتل کا اعتراف کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں