The news is by your side.

Advertisement

سانحہ منیٰ ،1100 حاجی شہید ، 43 پاکستانی شہداء کی تصدیق

اسلام آباد: منی کے المناک سانحے میں شہید حاجیوں کی تعداد گیارہ سو سے تجاوز کرگئی، تینتالیس پاکستانیوں کی شہادت کی بھی تصدیق ہوگئی جبکہ باسٹھ پاکستانیوں کی تلاش جاری ہے.

رواں سال حج پر ہونے والے دوسرے دل دہلادینے والے حادثے میں شہداء کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، وزیرمذہبی امور سرداریوسف نے اے آروائی نیوز سے گفتگو میں کہا کہ اب تک شہداء کی تعداد گیارہ سو سے تجاوز کرگئی ہے.

سعودی عرب میں پاکستانی سفیر منظورالحق نے سانحہ منی میں تینتالیس پاکستانیوں کی شہادت کی تصدیق کی، حادثے میں بنوں کے رہائشی میاں بیوی نصر اقبال اور نوشین بخاری کی بھی شہادت کی تصدیق ہوگئی، لاپتا پاکستانیوں میں سے دو سو سترہ سے رابطہ ہو گیا۔

شہدا‌ء اور اسپتالوں میں زیر علاج زخمیوں کی فہرست ویب سائٹ پر لگادی گئی ہے اور رابطہ نمبرز بھی جاری کردیئے گئے ہیں، شہریوں کے مطابق شہدا کی تعداد میں اضافے کے باوجود فہرست میں ناموں کا اندراج سست روی کا شکار ہے، جس کے باعث شدید پریشانی کاسامنا ہے۔

سانحہ منی سے متعلق وزیراعظم ہاؤس کے فوکل پرسن فضل چوہدری نے انکشاف کیا ہے کہ منیٰ حادثے میں مجموعی طور پر گیارہ سو حجاج کرام شہید ہوئے ہیں، سانحہ منیٰ میں سعودی وزراتِ صحت نے تو سات سو انتہر شہادتوں کی تصدیق کی تھی لیکن وزیراعظم ہاؤس کے فوکل پرسن ڈاکٹر طارق فضل چوہدری نے اصل حقائق بتادیئے۔

طارق فضل چوہدری کا کہنا تھا کہ دو سو اٹھائیس لاپتہ افراد کو ان کے پیاروں سے ملوادیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ وزیرِاعظم کی ہدایت پر سانحہ منی کے شہداء کے لواحقین کو سرکاری خرچے پر عمرے پر بھیجا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ شہید حجاج کے لئے حکومت کی جانب سے پانچ لاکھ اور زخمیوں کے لئے دولاکھ روپے امداد کا اعلان بھی کیا گیا ہے، ترجمان وزیرِاعظم ہاوس کا کہنا ہے کہ منی کرین حادثے میں شہید ہونے والے حجاج کرام کے قریبی عزیزوں کو بھی سرکار سعودی عرب بھیجے گی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں