The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی حکومت نے عازمین حج کو بڑی سہولت فراہم کردی

اسلام آباد : وزارت مذہبی امور نے عازمین حج کیلئے چند قوائد میں نرمی کردی ، جس کے بعد 5جنوری2023 تک پاسپورٹ کارآمد نہ ہونیوالے عازمین درخواست دے سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزارت مذہبی امور کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ عازمین حج کی آسانی وسہولت کیلئےکوشاں ہیں اور عازمین حج کے اصرار پر مندرجہ ذیل مخصوص صورتوں میں چند قوائد کو نرم کردیا ہے۔

جن عازمین کے پاسپورٹ 5 جنوری 2023 تک کارآمد نہیں اپنے پاسپورٹ کے اعادہ کیلئے پاسپورٹ آفس کے فراہم کردہ ٹوکن پر بھی حج درخواست جمع کروا سکتے ہیں۔

وزارت مذہبی امور نے کہا کہ نئے پاسپورٹ 18 مئی 2022 تک لازمی جمع کروا دیں،بصورت دیگر ناکام تصور کیے جائیں گے جبکہ دیگر درخواست گزار اپنے پاسپورٹ حج درخواست کے ساتھ ہی بینکوں میں جمع کروانے کے پابند ہیں۔

وزارت مذہبی امور کے مطابق سمندرپار پاکستانی 5 جنوری 2023 تک کارآمد پاکستانی پاسپورٹ اور شناختی کارڈ NICOP کی فوٹو کاپی پر اپلائی کر سکتے ہیں

وزارت مذہبی امور نے مزید کہا کہ اپنے بینک کے توسط سے وزارت کو آخری حج پروازوں میں بکنگ کی درخواست بھجوائیں اور مقررہ تاریخ سے لیٹ پاسپورٹ جمع کرانے کی صورت میں ویزہ نہ لگنے کی مکمل ذمہ داری لیں، ان کے لئے اصل پاسپورٹ 20 ذی القعدہ سے پہلے وزارت میں پہنچانا لازمی ہے۔

وزارت کا کہنا تھا کہ سال 2015 سے 2019 کے دوران حج کرنے والے افراد اس سال سرکاری حج سکیم میں درخواست دینے کے اہل نہیں ، وہ مرد حضرات جو کسی ایسی خاتون رشتہ دار کے شرعی محرم ہوں جس نے خود بھی مذکورہ عرصہ کے دوران حج نہ کیا ہو۔

انھوں نے مزید بتایا کہ 12 سال سے کم عمر بچے بھی حج کیلئے اپلائی کر سکتے ہیں جن کی ویکسین نہیں ہوئی۔ یہ معاملہ سعودی وزارت حج سے منظوری پر مشروط ہے، تمام منتخب 14 بینکوں کو ان قوائد سے متعلق ہدایات جاری کردی گئیں ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں