The news is by your side.

Advertisement

سانحہ سہون کے ذمہ دار ہم نہیں، سیکیورٹی نامکمل تھی، وزارت پانی و بجلی

اسلام آباد: وزارت پانی و بجلی نے درگاہ لعل شہباز قلندرؒ کی بجلی منقطع کرنے سے متعلق وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ غفلت کا مرتکب ہمیں قرار نہ دیا جائے، حادثے والے دن درگاہ پر انتظامات نامکمل تھے، انتظامیہ حساس مقامات اور درگاہوں کی سیکیورٹی کے لیے انتظامات کرے۔


یہ پڑھیں: سہون حملہ: شہدا کی تعداد 90 ہوگئی، 343 زخمی، 73 کی حالت نازک


جاری کردہ بیان میں وزارت پانی و بجلی نے کہا ہے کہ درگاہ حضرت لعل شہباز قلندرؒ کی انتظامیہ نے بجلی کا غیر قانونی استعمال کیا،درگارہ کی بجلی دکانوں سمیت دیگر مقاصد کے لیے استعمال کی گئی جس کے باعث بل کئی ملین روپے ہوگیا جو ادا نہیں کیا گیا۔

ترجمان نے بتایا کہ سندھ حکومت نے سال 2011 میں حیسکو کو بل دینے سے انکار کیا، درگاہ شریف کے لیے بجلی کا خصوصی فیڈر بنایا گیا،سال 2015 میں خصوصی فیڈر سے بجلی کی فراہمی معطل کی تاہم سندھ حکومت کی درخواست پر درگاہ کا لوڈ دیگر فیڈر پر منتقل کیا جس پر معمول کے مطابق لوڈ شیڈنگ ہوتی ہے۔

وزارت پانی و بجلی نے کہا کہ واقعے والے دن بھی معمول کے مطابق چھ بجے لوڈ شیڈنگ ہوئی، حادثے کے دن بھی سیکیورٹی انتظامات پورے نہیں تھے،درگاہ انتظامیہ نے متبادل طریقے سے بجلی کی فراہمی کا پلان مرتب نہیں کیا اپنی غفلت پر وزارت پانی و بجلی کو ناکامی کا ذمہ دار نہ ٹھہرایا جائے، صوبائی انتظامیہ درگاہوں اور حساس مقامات کی سیکیورٹی یقینی بنائے۔

اسی سے متعلق: سہون: درگاہ کی بجلی چوری، بل 4 کروڑ تک پہنچ گیا

 یاد رہے کہ درگاہ لعل شہباز قلندرؒ کی بجلی چوری ہونے کا انکشاف ہوا تھا جس کے باعث درگاہ کا بل 4 کروڑ تک پہنچ گیا، دھماکے کے وقت بجلی اسی وجہ سے بند تھی۔
Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں