The news is by your side.

Advertisement

جمعے کی نماز جامع مسجد میں ہوگی، میر واعظ عمر فاروق

سری نگر: حریت رہنماء میرواعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے لگائے گئے کرفیو کے سبب کشمیری مسلمان 15 ہفتوں سے نماز جمعہ ادا کرنے سے قاصر ہیں تاہم آئندہ جمعے کی نماز ہر صورت جامع مسجد سری نگر میں ادا کی جائے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے بھارتی جنتا پارٹی کے رہنماء یشونت سنہا سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ حریت رہنماء میر واعظ عمر فاروق کا کہنا تھا کہ بھارتی فوج کے کرفیو کی وجہ سے کشمیری مسجد میں نماز جمعہ ادا نہیں کرسکتے تاہم آئندہ جمعے کرفیو اور پابندیوں کے باوجود جامع مسجد سری نگر میں باجماعت نماز ہوگی۔

پڑھیں:  بھارت کشمیرمیں جاری ظلم وبربریت کوفوری بندکرے،اوآئی سی

 انہوں نے اعلان کیا کہ ’’پابندیوں کے باوجود آئندہ جمعے کی نماز ہر صورت جامع مسجد سری نگر میں ادا کروں گا‘‘۔

یاد رہے حریت رہنماء برہان مضطفر وانی کی زیر حراست شہادت کے بعد کشمیر میں ہزاروں افراد نے بھارتی تسلط کے خلاف احتجاج شروع کیا تاہم مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے قابض فوج کی جانب سے پیلٹ گنز سمیت دیگر گولیوں کا استعمال کیا گیا۔

مزید پڑھیں: کشمیری رہنما یاسین ملک کی حالت بدستور تشویشناک

بھارتی فوج نے کشمیریوں کے احتجاج کو دیکھتے ہوئے وادی میں کرفیو لگانے کا اعلان کیا جو تاحال جاری ہے جبکہ مختلف علاقوں میں بھارتی مظالم سے اب تک سینکڑوں نہتے کشمیری شہید ہوچکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں