The news is by your side.

Advertisement

مردہ قرار دیا جانے والا 36 سالہ شخص معجزاتی طور پر زندہ

کیرولینا : امریکہ میں مردہ قرار دیا جانے والا 36سالہ شخص معجزاتی طور پر زندہ ہوگیا، اہل خانہ خوشی سے روپڑے انہوں نے سوچا بھی نہ تھا ایسا ہو بھی سکتا ہے۔

امریکی ریاست کیرولینا کے رہائشی 36سالہ ایرک ایلس عمارت کی دوسری منزل پر قائم فلیٹ میں اپنی فیملی کے ساتھ مقیم تھا کہ ایک روز کام کے دوران اوپر گرکر شدید زخمی ہوگیا۔

دوسری منزل سے گرنے کے باعث اس کی پسلی کی دو ہڈیاں ٹوٹ گئیں اور سر میں بھی شدید چوٹ آئی جس کی وجہ سے وہ گرتے ہی بے ہوش ہوگیا، ایلیس کی کئی ہنگامی سرجری کرائی گئیں لیکن مثبت نتیجہ برآمد نہیں ہوا۔

ڈاکٹروں کے مطابق حادثے کے باعث ایرک ایلس کا دماغ اپنی جگہ سے 8ملی میٹر ہل گیا تھا، جس کے ٹھیک ہونے کا امکان نہ ہونے کے برابر ہے، اسی سبب ڈاکٹروں نے اسے طبی طور پر مردہ قرار دے دیا۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایلس کے خاندان اہل خانہ نے اس کے اعضاء عطیہ کرنے کی غرض سے میت کو نہیں دفنایا تاہم کچھ دن بعد ایلس کو اچانک ہوش آگیا اور وہ بستر سے اٹھ بیٹھا۔

یہ منظر دیکھ کر اسپتال میں موجود ڈاکٹروں نے بھی حیرت میں مبتلا ہوکر دانتوں میں انگلیاں دبالیں جبکہ ایلس کے اہلخانہ خوشگوار حیرت کے عالم میں رو پڑے۔ انہوں نے سوچا بھی نہیں تھا کہ وہ اس طرح زندہ ہوجائے گا۔

ایلس نے کہا کہ شاید میری ماں پہلے ہفتے میں یا دو دن بعد گھر آئیں گی اور صرف روئیں گی کیونکہ وی سوچ رہی ہوں گی کہ میں اس دنیا سے چلا گیا ہوں۔

آج ایلس چل رہا ہے، سب سے باتیں کر رہا ہے اور تقریبا مکمل صحت یاب بھی ہوچکا ہے۔اس کا کہنا ہے کہ میں سوچتا ہوں کہ یہ ایک معجزہ ہے جو میں ابھی بھی یہاں موجود ہوں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں