The news is by your side.

Advertisement

کشمیریوں کے لئے آواز اٹھانے پر بھارت انکی جان کا دشمن بن چکا ہے، مشعال ملک

اسلام آباد : حریت رہنماء یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک کا کہنا ہے کہ کشمیریوں کے لئے آواز اٹھانے پر بھارت انکی جان کا دشمن بن چکا ہے، دورہ ناروے کے دوران جہاز سمیت متعدد مقامات پر حراساں کرنے کی کوشش کی گئی ۔

تفصیلات کے مطابق دورہ ناروے کے بعد اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کے دوران مشعال ملک نے کہا کہ ناروے کی ملکہ اورسابق وزیر اعظم سمیت اراکین پارلیمنٹ اور سول سوسائٹی سے ملاقاتوں میں مسئلہ کشمیر کو بھرپور اجاگر کیا، نارویجن سیاستدانوں اور عوام کو مسئلہ کشمیر سمیت مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کے کشمیریوں پر انسانیت سوز مظالم سے آگاہ کیا۔

مشعال ملک کا کہنا تھا کہ انہیں بتایا کہ پیلٹ گنز کی وجہ سے ہزاروں کشمیری بینائی سے محروم ہو چکے ہیں جبکہ سینکڑوں قتل اور زخمی ہیں، کشمیریوں پر بھارتی مظالم بارے سن کر نارویجن شہری زار و قطار رو پڑے ۔

حریت رہنماء یاسین ملک کی اہلیہ نے کہا کہ ناروے میں منعقدہ امن کانفرنس میں کشمیر کا مقدمہ بھرپور انداز میں پیش کیا جبکہ ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت عالمی تنظیموں سے ملاقاتوں میں بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کیا، نارویجن شہریوں کو آگاہ کیا کہ مسئلہ کشمیر پر مذاکرات سے انکاری ہندوستان متعدد کوششوں کے باوجود مذاکرات کی میز پر نہیں آ رہا ۔

ان کا کہنا تھا کہ نارویجن سیاستدانوں اور سول سوسائٹی نے مسئلہ کشمیر میں خصوصی دلچسپی ظاہر کی جبکہ سابق نارویجن وزیراعظم نے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ثالث کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی ۔

مشعال ملک نے کہا کہ کشمیریوں کے لئے آواز اٹھانے پر ہندوستان انکا جانی دشمن بن چکا ہے، بھارتی ایجنٹوں نے دورہ ناروے کے دوران جہاز سمیت متعدد مقامات پر انہیں حراساں کیا۔

انکا کہنا تھا کہ گزشتہ چند روز میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال مزید گھمبیر ہو گئی ہے، گزشتہ روز چھ نوجوانوں کو شہید کیا گیا یے۔بھارتی فورسز نے یاسین ملک کو شدید تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گرفتار کر کے جیل منتقل کر دیا ہے، مقبوضہ کشمیر کے اسکولوں میں بھارتی فوج نے مورچے بنا رکھے ہیں ،،،جس پر کشمیری بچے اپنے بستے جلا کر احتجاج کر رہے ہیں۔

مشعال ملک نے کہا کہ آصفہ کا بیہمانہ قتل ہندوستان کے منہ پر طمانچہ ہے ۔آصفہ کے قتل پر بے جی پی کی ہٹ دھرمی افسوسناک ہے ۔

پریس کانفرنس میں ان کا کہناتھا کہ مسئلہ کشمیر پاکستان انڈیا کا مسئلہ نہیں، کشمیری مسئلے کے اصولی فریق ہیں، مذاکراتی عمل پر یقین رکھنے والے کشمیریوں کو ہندوستان پر اعتماد نہیں ، کشمیری مسئلہ کشمیر کا پر امن حل چاہتے ہیں، مسئلہ کشمیر پر مذاکراتی عمل میں کسی عالمی ضامن کی موجودگی اور مسئلے کے حل کیلئے مذاکراتی عمل کاباقاعدہ ٹائم فریم چاہتے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں