سانحہ منیٰ: لاپتہ ہونے والے ایرانی سفارت کار کی شناخت ہوگئی -
The news is by your side.

Advertisement

سانحہ منیٰ: لاپتہ ہونے والے ایرانی سفارت کار کی شناخت ہوگئی

تہران: ستمبر میں حج کے دوران پیش آنے والے سانحہ منیٰ میں لاپتہ ہونے والے ایرانی سفارت کارکی نعش شناخت کرلی گئی ہے جس سے ایرانی میڈٰیا میں ان کے اغوا کیگردش کرتی افواہات دم توڑ گئی ہیں۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی کے مطابق لبنان میں تعینات 49 سالہ ایرانی سفیر غضنفررکن آبادی کی لاش کی شناخت ڈی این اے کے ذریعے کی گئی ہے۔

ان کے بھائی مرتضیٰ کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنے بھائی کی میت دیکھنے کے بعد شناخت کا اعلان کیا ہے۔

ایرانی سفارت کار کی میت جمعرات کو ان کے آبائی وطن پہنچادی جائے گی۔

سانحہ منیٰ میں بائیس سو سے زائد افراد شہید ہوئے جن میں سب سے زیادہ 464 ایرانی حاجی شامل ہیں اوراسے حج کی تاریخ کا سب سے بڑا سانحہ قراردیا گیا ہے۔

غضنفر لبنان کے شہربیروت میں سفارت کارتعینات تھے جو کہ حزب اللہ کی حمایت کے سبب ایران کی اہم سفارتی پوزیشن ہے۔

ایران کے نائب وزیرِخارجہ حسین امیرعبدالہیان نے ماہ نومبر کے اوائل میں کہا تھا کہ ایرانی انٹلی جنس ایجنسیز کے مطابق غضنفر زندہ ہیں اور ایران نے سعودی عرب سے ان کی زندہ سلامت واپسی کا مطالبہ بھی کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں