The news is by your side.

Advertisement

آصف حسنین کی پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ کے سینئر رہنما آصف حسنین کی سابق سٹی ناظم مصطفیٰ کمال کی پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی ‘ مصطفیٰ کمال نے انہیں پاک سرزمین پارٹی میں خوش آمدید کہا۔

مصطفیٰ کمال نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے آصف حسنین کی پارٹی میں شمولیت کااعلان کیا اور انہیں خوش آمدید کہا ۔ ان کا کہنا تھا کہ آصف حسنین ایم کیو ایم کی جانب سے ملا مینڈیٹ چھوڑ کرپاک سرزمین پارٹی میں شامل ہورہی ہیں۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آٓٓصف حسنین کا کہنا تھا کہ مجھ پر کسی قسم کا کوئی دباؤ نہیں ہے‘ یہ پہلے سے طے تھا تاہم مصطفیٰ کمال بھائی کے دبئی کے دورے کی وجہ سے ملتوی ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے آباو اجداد نے پاکستان کے لیے قربانیاں دی ہیں ہم یہاں اپنی نسلوں کی بہتری کے لئے آئے تھے پاکستان زندہ باد ہے اور رہے گا۔

آصف حسنین نے اعلان کیا کہ آج سے میرا ایم کیو ایم سے تعلق ختم ہوگیا‘ میں اپنی نشست کو چھوڑتا ہوں۔


MQM's Asif Husnain joins PSP by arynews

اس موقع پر مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ فاروق ستار متحدہ قائد کو بچانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں تاہم وہ اس کوشش میں کامیاب نہیں ہوں گے ، ان کا کہنا تھا کہ آج بھی متحدہ کے قائد ساری دنیا میں پھیلے ہوئے کارکنا ن سے رابطے میں ہیں۔

انہوں سوال اٹھایا کہ سیاست سے لاتعلقی کے اعلان پر کیا متحدہ کے قائد کے گناہ دھل گئے، انہوں نے حکومت سے سوال کیا کہ کیا در و دیوار نے پاکستان کے خلاف گفتگو کی تھی جنہیں گرادیا گیا، حکومت بتائے کہ ان کے خلاف کیا اقدامات کیے گئے۔

آصف حسنین متحدہ قومی موومنٹ کے رکن قومی اسمبلی تھے اور دو روز قبل رینجرز نے انہیں فلائٹ لینے چلد لمحوں قبل حراست میں لیا تھا۔

رینجرز کے مطابق انہیں تحویل میں لینے کا مقصد اس بات کی تحقیق تھا کہ کہیں ان کے خلاف کسی قسم کے مقدمات زیرِ تفتیش تو نہیں ہیں ‘ چند گھنٹوں بعد انہیں رہا کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ ایم کیو ایم کے کئی اہم رہنما جن میں ڈاکٹر صغیر ، انیس ایڈوکیٹ، رضا ہارون، افتخار عالم اور وسیم آفتاب اب تک ایم کیو ایم سے علیحدگی اختیار کرکے پاک سرزمین میں شمولیت اختیا ر کرچکے ہیں۔

مصطفی کمال نے رواں سال تین مارچ کو ایم کیو ایم سے علیحدگی کا اعلان کرکے اور متحدہ قائد پر شدید تنقید کرکے پاکستان کی سیاست میں تہلکہ مچادیا تھا دوسری جانب متحدہ قومی موومنٹ بھی اپنے قائد کی پاکستان مخالف تقریر کے بعد ان سے اظہارِ لاتعلقی کرچکی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں