The news is by your side.

Advertisement

خواتین کے تحفظ کے لئے اسلام آباد پولیس کا اہم اقدام

 

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت میں خواتین کی ہراسگی کے واقعات کی روک تھام کے لئے خصوصی ایپ متعارف کرادی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایس پی سٹی اسلام آباد سرفراز ورک نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اسلام آباد پولیس نے خواتین کے ساتھ ہراسگی کے معاملات کی روک تھام کے لئے ایک ایپ متعارف کرائی ہے، یہ ایپ وزیراعظم عمران خان کے ویژن کے تحت تیار کی گئی ہے، جس کو متعارف کرانے کا مقصد اسلام آباد کے شہریوں خاص طور پر خواتین کو تمام سہولیات ان کے دورازے پر مہیا کی جائیں۔

ایس پی سٹی نے بتایا کہ مختلف معاملات پر اسلام آباد کے شہریوں کو سرکاری اداروں میں جانا پڑتا تھا، جہاں اسے مسائل بھی پیش آتے تھے جبکہ کرونا وبا کے باعث بیشتر سرکاری اداروں میں ملازمین کی تعداد کم کردی گئی ہے، اسی لئے اس ایپ کو متعارف کرایا گیا جسے سٹی ایپ کا نام دیا گیا ہے۔

سرفراز ورک نے بتایا کہ یہ ایپ گوگل ایپ پر دستیاب ہے ، جسے باآسانی ڈاؤن لوڈ کیا جاسکتا ہے، ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے بعد صارف اپنی آئی ڈیز بنا کر خود کو رجسٹرڈ کراتا ہے، اسی آئی ڈی میں ایک اور سیکشن ہے، جسے ای پولیسنگ کا نام دیا گیا ہے، یہ انسپکٹر جنرل پولیس اسلام آباد کے ساتھ لنک ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پنجاب پولیس کی جانب سے خواتین کے تحفظ کے لیے سیفٹی ایپ تیار

ایس پی سٹی نے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سٹی ایپ میں ایک آئیکون بنایا گیا ہے، جسے ہراسمنٹ کا نام دیا گیا ہے، جس مں خواتین ہراسانی کے واقعات فوری طورپر درج کراسکتی ہیں، اس کے علاوہ سٹی ایپ میں ملزمان کی تصاویر اپ لوڈ کرنے کی سہولت بھی شامل ہے، اس ایپ کی بڑی خاصیت یہ ہے کہ اسے سیف سٹی کیمروں کے ساتھ منسلک کیا گیا ہے۔

سرفراز ورک نے مزید بتایا کہ ایپ پر درج ہونے والی شکایت فوری طور پر ایکشن لیا جائے گا، ابھی ہم نے اس کا رسپانس ٹائم پانچ منٹ رکھا ہے جبکہ مارکیٹ ایریا میں ہمارا رسپانس ٹائم دو منٹ ہے، خواتین سے بدتمیزی کرنے والا ملزم فورا دھرلیا جائے گا۔

اسلام آباد کی خواتین نے اس ایپ کو مثبت قرار دیا ہے، بیشتر خواتین کا کہنا ہے کہ یہ ایپ صرف اسلام آباد کے لئے نہیں بلکے پورے پاکستان کے لئے جلد از جلد متعارف کرائی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں