The news is by your side.

Advertisement

موبائل فون جیب میں رکھنا کن لوگوں کیلئے خطرناک ہے؟

آپ کو اگر موبائل فون کو سامنے والی جیب میں رکھ کر چلنے کی عادت ہے تو اس سے فوری طور پر چھٹکارا پالیں بصورت دیگر یہ آپکو کسی بڑے خطرے سے دوچار کردے گی۔

آج کل تقریباً ہر فرد کی جیب میں موبائل فون موجود ہوتا ہے لیکن اسے یہ معلوم نہیں ہوتا کہ ایسا کرنا کتنا خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔ پاکستان میں تو کم ہی ایسا ہوتا ہے کہ کسی کے پاس موبائل ہو اور وہ جیب میں نہ رکھتا ہو۔

اس حوالے سے ماہرین نے تحقیق کے بعد بتایا ہے کہ موبائل سامنے کی جیب میں رکھنا کتنا خطرناک ہو سکتا ہے کیونکہ موبائل فون سے نکلنے والی ریڈی ایشن انسان کیلئے کسی بھی بڑے نقصان کا سبب بن سکتی ہیں۔

دوسری جانب امراض قلب کے پروفیسر اور کنسلٹنٹ ڈاکٹر خالد النمر نے اطمینان دلایا ہے کہ موبائل فون دل کے ان مریضوں کے لیے نقصان دہ نہیں جو پیس میکر لگوائے ہوئے ہوں، علاوہ ازیں جیب میں موبائل رکھنے سے دل کی دھڑکن پر بھی کوئی برا اثر نہیں پڑتا۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق ڈاکٹر النمر نے اس حوالے سے ٹوئٹر پر بتایا کہ موبائل کے استعمال سے دل کے ان مریضوں کو کسی طرح کا کوئی نقصان نہیں ہوتا جو پیس میکر لگوائے ہوئے ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس قسم کے آلات کی ساخت میں اس بات کا خیال رکھا جاتا ہے کہ دیگر آلات کے ہوتے ہوئے برقی مقناطیسی لہروں کو روکا جائے۔

امراض قلب کے کنسلٹنٹ نے اطمینان دلایا ہے کہ جیب میں موبائل رکھنے میں کوئی حرج نہیں۔
اس سے دل کی دھڑکن متاثر نہیں ہوتی اس کی وجہ یہ ہے کہ اس کی برقی مقناطیسی لہروں کا دائرہ تین واٹ سے کم ہوتا ہے، اس سے جو ویووز نکلتی ہیں وہ انسانی نسیجوں کے لیے مضر نہیں، یہ ریڈیو کی لہروں جیسی ہوتی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں