The news is by your side.

Advertisement

ویکسین نہ لگوانے والوں کا موبائل سم بلاک کر دیا جائے گا، فیصلہ آ گیا

لاہور: پنجاب حکومت نے کرونا وائرس کے خلاف ویکسینیشن نہ کرانے والے افراد کا موبائل سم کارڈ بلاک کرنے کا حتمی فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب نے کرونا وبا کے تدارک، اور ویکسینیشن عمل کو تیز کرنے کے لیے اہم فیصلے کر لیے، ویکسین نہ لگوانے والوں کا موبائل سم کارڈ بلاک کر دیا جائے گا۔

اس سلسلے میں آج وزیر صحت پنجاب یاسمین راشد کی زیر صدارت کرونا صورت حال کا جائزہ اجلاس منعقد ہوا، جس میں صوبے میں کرونا وبا کے پھیلاؤ کو روکنے، اور ویکسینیشن سینٹرز کی تعداد برھانے کی تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 20 فی صد آبادی کی ویکسینیشن والے اضلاع میں کاروبار کھول دیے جائیں گے، محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر اس سلسلے میں نوٹیفکیشن جاری کرے گا۔

محکمہ پرائمری ہیلتھ پنجاب کرونا ویکسین کا ٹارگٹ پورا کرنے میں ناکام

12 جون سے پنجاب میں 18 سال کی عمر سے زائد افراد کی واک ان ویکسینیشن کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے، پنجاب کے اہم مزارات کے باہر موبائل ویکسینیشن کیمپ قائم کیے جائیں گے۔

اجلاس میں سرکاری اسپتالوں میں سہولتوں میں اضافہ و دیگر اقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا، صوبے میں کرونا وائرس کے کیسز اور انفیکشن سے اموات میں واضح کمی پر سیکریٹریز صحت کی تعریف کی گئی۔

صوبائی وزیر یاسمین راشد نے کہا صوبے میں کرونا کے مریضوں کی تعداد میں واضح کمی واقع ہوئی ہے، حکومت کرونا کے تدارک کے لیے تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے، کرونا کے مثبت کیسز میں واضح کمی کا کریڈٹ انتظامیہ کو جاتا ہے۔

یاسمین راشد کا کہنا تھا ہفتے سے 18 سال سے زائد افراد کی ویکسینیشن کا آغاز کیا جا رہا ہے، ویکسینیشن کے عمل کو بھرپور طور سے کامیاب بنایا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں