The news is by your side.

Advertisement

مودی کا پتلاجواہرلعل نہرو یونیورسٹی میں نذر آتش

نئی دہلی : نیشنل اسٹودنٹ یونین آف انڈیا کے کارکنان نے نئی دہلی کی جواہرلعل نہرو یونیورسٹی میں نریندر مودی کا پتلا نذر آتش کردیا۔

تفصیلات کےمطابق نئی دہلی کی جواہر لعل یونیورسٹی میں منگل کے روز مبینہ طور پر کانگریس سے تعلق رکھنے والے طلبا نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی اور بی جے پی کےصدر امت شرما کا پتلا جلادیا۔

جواہر لعل یونیورسٹی میں ہندو تہوار دشہرہ پر راون کی طرح ایک ہی پتلے پر کئی سر لگا کر ان پر بی جے پی رہنماﺅں کی تصویریں بنا کر جلایاگیا اس موقع پرطلبا میں سدھوی پرگیا ،نتھو رام گودسے اور آسارام باپو شامل تھے۔

وائس چانسلر جواہر لال یونیورسٹی کا کہناہے یونیورسٹی میں طلبا کی جانب سے نریندر مودی کا پتلا جلانے کے واقعے کی تحقیقات کی جارہی ہے۔

modi-post-1

دوسری جانب یونیورسٹی کے ایک طلبا رہنما کا کہنا ہے کہ ہم نے پہلے بھی یونیورسٹی کی حدود میں نریندر مودی کے پتلے کو نذر آتش کیا تھا لیکن کچھ بھی نہیں ہوا ،پتلے نذ رآتش کرنا معمول کی بات ہےاس کے لیے کسی سے اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہوتی۔

modi-post-2

واضح رہے کہ سنی دہمن جو یونیورسٹی اسٹودنٹ الیکشن میں صدارتی امیدوار تھے کا کہنا ہے کہ دہشرہ کے موقع پر نریندر مودی کا پتلا جلانے کا مطلب اس سوچ اور خیالات کو ختم کرنا ہےجو مودی کے اقتدار میں آنے کےبعد ملک میں تیزی سے پھیل رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں