The news is by your side.

Advertisement

ہم روشن خیالی کو مکمل طور پر مسترد کرتے ہیں‘ مولانا فضل الرحمان

سوات: جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ جب ہم اسلامی روایات کی بات کرتے ہیں تو ہمیں انتہاپسند کہا جاتا ہے، ہم ایسی روشن خیالی کو  مکمل طور پر مسترد کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جے یو آئی کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کرپٹ سیاست دانوں نے ملک کا بیڑا غرق کردیا ہے‘ ہم نے ہمیشہ معصوم انسانوں کے قتل عام کی مذمت کی ہے۔

انھوں نے سوات میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکا نے جب افغانستان پر حملہ کیا تھا تو قوم پرستوں نے ان کا ساتھ دیا۔ ہمیں طعنے دیے گئے کہ ہم طالبان کے ساتھ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کسی ایسی تحریک کی حمایت نہیں کریں گے جو آئین اور قانون کے باہر ہو۔ اپنے خطاب میں انھوں نے کہا کہ فوج نے قیام امن کے لئے بھرپور کردارادا کیا ہے۔

تحریک انصاف نے پختونوں کے کلچر کو تباہ کردیا، مولانا فضل الرحمان

جے یو آئی ف کے سربراہ نے کہا کہ ہمیں مغرب کا فلسفہ سیاست کسی بھی صورت قبول نہیں ہے‘ جب ہم اسلام کی بات کرتے ہیں تو ہمیں جاہل کہا جاتا ہے۔ عزت دار خواتین سے دوپٹہ چھیننا آزادی نہیں ہے۔

خیال رہے گزشتہ روز شانگلہ میں مولانا فضل الرحمان نے ایک جلسے سے خطاب کرتے ہوئے تحریک انصاف کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کی روشن خیال نے پختونوں کی ثقافت کو تباہ کرکے انھیں بدنام کیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں