The news is by your side.

Advertisement

امریکا سے کروڑوں تتلیوں کی ہجرت

امریکا کے سرد شمالی علاقوں سے کروڑوں تتلیاں میکسیکو کی طرف ہجرت کر گئیں۔ لاتعداد اڑتی تتلیوں نے آسمان کو ڈھانپ کر اسے اپنے رنگ میں رنگ لیا۔

ہر سال کی طرح اس سال بھی کم و بیش ایک ارب تتلیاں شمالی امریکا سے نقل مکانی کر کے میکسیکو پہنچ گئی۔

مونارک نسل کی یہ تتلیاں ہر سال نومبر میں 4 ہزار کلو میٹر کا سفر طے کر کے سردیاں گزارنے میکسیکو کے گرم علاقے میں پہنچتی ہیں، جہاں سورج کی گرماہٹ سمیٹنے کے ساتھ ساتھ اپنی افزائش نسل بھی کرتی ہیں۔

سیاہ اور نارنجی رنگ کی یہ تتلی امریکا اور کینیڈا میں بڑی تعداد میں موجود ہیں تاہم ہر سال یہ موسم سرما میں گرم علاقوں کی طرف ہجرت کرتی ہیں اور سردیاں ختم ہونے پر واپس لوٹ آتی ہیں۔

اس ہجرت کے دوران طویل سفر اور غذائی قلت کی وجہ ان تتلیوں کی بڑی تعداد اپنی منزل پر پہنچنے سے قبل ہی موت سے ہمکنار ہوجاتی ہے۔ اوسطاً ہر 10 میں سے 4 تتلیاں اپنی منزل پر پہنچنے سے قبل دم توڑ دیتی ہیں۔

اس تتلی کی اوسط عمر بھی 2 سے 6 ہفتوں پر محیط ہے جس کے دوران یہ 250 سے ایک ہزار کے قریب انڈے دے سکتی ہیں۔

اس تتلی کی افزائش کا خلا میں بھی کامیاب تجربہ کیا جاچکا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں