The news is by your side.

Advertisement

منی لانڈرنگ کیس: حسین لوائی کو چیئرمین اسٹاک ایکسچینج کے عہدے سے ہٹانے کی ہدایت

کراچی: سیکیورٹی ایکسچینج آف پاکستان نے منی لانڈرنگ کے الزام میں گرفتار حسین لوائی کو اسٹاک ایکسچینج کے عہدے سے برطرف کرنے کی ہدایت جاری کردی۔

ذرائع کے مطابق پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے حکام نے ایک روز قبل پیر کو ہونے والے بورڈ آف ڈائریکٹر کے اجلاس میں حسین لوائی کو عہدے سے برطرف نہ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

پی ایس ایکس بورڈ نے چیئرمین کے معاملے پر دیکھو اور انتظار کرو کی پالیسی پر چلنے پر اتفاق کیا تھا مگر اُن کی غیر موجودگی میں حکام نے آزاد ڈائریکٹر کو معاملات چلانے کے لیے نامزد کیا تھا۔

ایس ای سی پی نے پی ایس ایکس کے بورڈ آف ڈائریکٹر کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے حسین لوائی کو عہدے سے برطرف کرنےکی ہدایت اور نوٹی فکیشن جاری کیا جس کے مطابق انہیں ایس ای سی پی کے قانون 2015 کے سیکشن 12 اور انڈر سیکشن 170  عہدے سے برطرف کیے جانے کا حکم دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ سندھ کی سیاسی شخصیت کے قریبی دوست سمجھے جانے والے پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے چیئرمین اور نجی بینک کے مالک کو فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی نے منی لانڈرنگ کے الزام میں 6 جولائی کو گرفتار کر کے اگلے روز جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا تھا۔

مزید پڑھیں: آصف علی زرداری اورفریال تالپورکوکل ایف آئی اے نے طلب کرلیا

حسین لوائی نے عدالت سے استدعا کی تھی کہ وہ بلڈپریشر کے مریض ہیں علاوہ ازیں انہیں کئی بیماریاں بھی لاحق ہیں، ایف آئی اے نے عدالت میں مؤقف اختیار کیاکہ ملزم کا میڈیکل ٹیسٹ کروایا جس میں وہ مکمل تندرست ہیں۔

عدالت نے ایف آئی اے کی درخواست منظور کرتے ہوئے منی لانڈرنگ کیس میں نامزد ملزم کو 11 جولائی تک جسمانی ریمانڈ پر فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کے حوالے کردیا تھا۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں ایف آئی اے کی جانب سے رپورٹ پیش کی گئی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ 3 بینکوں میں 29 جعلی اکاؤنٹس کی نشاندہی ہوئی جن کے ذریعے 35 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں: آصف زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم

حسین لوائی کی گرفتاری پر پیپلزپارٹی کے رہنما سعید غنی نے دو روز قبل ردعمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ جعلی اکاؤنٹس کیس کی تین چار سال قبل تفتیش مکمل ہوچکی، جب یہ سارا معاملہ چل رہا تھا تو چیئرمین اسٹاک ایکسچینج کو گرفتار کیوں نہیں کیا گیا؟

یہ بھی یاد رہے کہ حسین لوائی کو رواں برس مئی میں ایس ای سی پی نے پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا چیئرمین مقرر کرنے کی منظور ی دی تھی، اس سے قبل وہ انڈپینڈنٹ ڈائریکٹر بھی نامزد ہوچکے ہیں۔

پی ایس ایکس کی جانب سے منیر کمال کی جگہ حسین لوائی کو بطور چیئرمین منتخب کر کے نوٹی فکیشن جاری کیا گیا تھا اور اسی کے ذریعے ایس ای سی پی سے منظوری بھی لی گئی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں