The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی معاشی درجہ بندی منفی قرار

اسلام آباد: عالمی ریٹنگ ایجنسی برائے معیشت موڈیر نے پاکستان کی معاشی درجہ بندی کو منفی قرار دیتے ہوئے مزید قرضے لینے کی تجویز دے دی۔

تفصیلات کے مطابق عالمی ریٹنگ ایجنسی موڈیز نے رپورٹ جاری کی جس میں کہا گیا ہے کہ پاکستانی معیشت کو بیرونی کھاتوں میں بڑے خسارے کا سامنا ہے جس کی وجہ سے ملکی معیشت کی درجہ بندی میں تنزلی ہوئی۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر کم ترین سطح پر آچکے اور انہیں ایک سے ڈیڑھ سال تک بڑھانا بہت مشکل ہے، معیشت کو سہارا دینے کے لیے پاکستان کو بیرونی قرضے لینے ہوں گے۔ موڈیز نے اپنی رپورٹ میں قرضوں کے لیے پاکستان کی ریٹنگ بی تھری پر برقرار رکھی۔

خیال رہے کہ عالمی ریٹنگ ایجنسی نے مسلم لیگ ن کی جانب سے پیش کیے جانے والے آئندہ مالی سال 19-2018 کے بجٹ پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ سپر ٹیکس کا آئندہ مالی سال میں جاری رہنا کریڈٹ نیگیٹو ہے۔

موڈیز کی رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ سنہ 2021 تک سپر ٹیکس مکمل طور پر ختم ہو جائے گا اور 2021 میں بینک کی کارکردگی میں بہتری متوقع ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں