The news is by your side.

Advertisement

دنیا بھر میں تین دہائیوں بعد منفرد چاند گرہن

کراچی: دنیا بھر میں تین دہائیوں بعد منفرد چاند گرہن دیکھا گیا، گرہن کی وجہ سے چاند کی رنگت سرخ ہوگئی.

پاکستان کے وقت کے مطابق یہ چاند گرہن صبح پانچ بج کر گیارہ منٹ پر شروع ہوا اور دس بج کر بائیس منٹ پر ختم ہوگا، امریکی تحقیقاتی ادارے ناسا کے مطابق گرہن لگے سرخ چاند کے منظر کو سائنسی اصطلاح میں سپر مون کہا جاتا ہے، جو تین دہائیوں بعد دیکھنے میں آیا ہے۔

سائنس دانوں کے مطابق آج چاند گرہن کے ساتھ ہی سپر مون بھی ہوا اور اس موقع پر چاند عام چاند سے زیادہ بڑا نظر آیا، کیوں کہ چاند زمین کے مدار کے انتہائی قریب سے گزرا ۔

فرانس،یونان،کولمبیا ،ارجنٹینا سمیت دنیا کے مختلف ممالک میں سپر مون تیتیس سال بعد دیکھا گیا، محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ مغربی ایشیا، افریقا، یورپ اور امریکا میں مکمل چاند گرہن ہوا، جو ایک گھنٹے بارہ منٹ تک دیکھا گیا تاہم پاکستان میں جزوی چاند گرہن ہوگا۔

ریکارڈز کے مطابق گزشتہ سو برسوں میں صرف پانچ مرتبہ ایسا ہوا ہے اور اس سے قبل 1982 میں ایسا چاند گرہن دیکھا گیا تھا اور اب اٹھائیس ستمبر کو سپر مون پر گرہن لگنے کے بعد یہ منظر آٹھ اکتوبر 2033 میں دکھائی دے گا.

واضح رہے کہ یہ چاند گرہن رواں سال کا دوسرا چاند گرہن ہے جب کہ اس سے قبل 4 اپریل کو چاند گرہن ہوا تھا، اسی طرح رواں برس 2 سورج گرہن بھی ہوچکے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں