site
stats
پاکستان

ایان علی کی طرح کئی لڑکیاں کرنسی اسمگلنگ میں ملوث ہیں: ڈاکٹرعاصم

کراچی: پیپلز پارٹی کے زیرِ حراست رہنما ڈاکٹرعاصم جو کہ دہشت گردوں کی مالی معاونت اور کرپش کے الزام میں قید ہیں م انہوں نے انکشاف کیا ہے کہ ایان علی کی طرح 20 سے 25 لڑکیاں بااثرسیاستدانوں کے لئے کرنسی اسمگلنگ کا کام کرتی ہیں۔

ذرائع نے نام نہ ظاہرکرنے کی شرط پر اے آروائی نیوز کو بتایا ہے کہ ڈاکٹرعاصم نے جے آئی ٹی کے سامنے کئی سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں اور کرپشن کیس میں کئی مشہوراورنامورافراد کے نام لئے ہیں۔

بتایا جارہا ہے کہ سندھ حکومت ڈاکٹرعاصم کےانکشافات کے بعد پیپلزپارٹی کے سینئر رہنماوٗں کو بچانے کی بھرپور کوشش کررہی ہے۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ڈاکٹرعاصم نے جے آئی ٹی کو بتایا ہے کہ پیپلزپارٹی کے تین اہم رہنماوٗں نے عذیربلوچ کو لیاری کا قبضہ حاصل کرنے میں مدد دی۔


ڈاکٹرعاصم حسین نے عدالت میں اپنے جرائم کا اعتراف کرلیا


انہوں نے نیب کے سامنے یہ بھی اعتراف کیا کہ پی پی پی کے کئی اہم رہنما کرپشن میں ان کے ساتھ شریک تھے۔

ڈاکٹرعاصم نے ایک ایسے منی چینجرکا نام بھی آشکارکیا جو کہ 2011 سے 2012 میں اربوں روپے بیرونِ ملک منتقل کرتا رہا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top