برونڈی میں جھنڈ کی صورت میں جاگنگ کرنے پر پابندی morning-jogging-bans-in-burundi
The news is by your side.

Advertisement

برونڈی میں جھنڈ کی صورت میں جاگنگ کرنے پر پابندی

بوجمبورا : افریقی ملک برونڈی کے صدر نے اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے بغاوت کے پیش نظر ہفتے کے روز جھنڈ کی صورت میں جاگنگ کرنے کو جرم قرار دیے دیا۔ جس کی سزا عمر قید ہے۔

تفصیلات کے مطابق براعظم افریقہ کے مشرقی ملک برونڈی کے صدر پائیر انکورونزیزا نے شہریوں پر گذشتہ کئی برس سے ہفتے کے روز مجمے کی صورت میں جاگنگ کرنے پر پابندی عائد کی ہوئی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ ہفتے کے روز یکجا ہوکر جاگنگ کرنا برونڈی کے شہریوں کی بہت پرانی روایت ہے، تاہم ملک کے موجودہ صدر سنہ 2005 میں اقتدار سنبھالنے کے بعد سے ہفتے کے روزجنڈ کی صورت میں جاگنگ کرنے کو جرم قرار دے دیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اگر کوئی شہری ہفتے کے روز جھنڈ کی صورت میں جاگنگ کرتا ہوا پکڑا جائے تو اسے عمر قید کی سزا سناتے ہوئے جیل منتقل کردیا جاتا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق برونڈی کے صدر پائیر انکورونزیزا کو خطرہ لاحق تھا کہ اپوزیشن جماعتیں ہفتے کے روز جنڈ کی صورت میں جاگنگ کے ذریعے موجودہ حکومت کے خلاف بغاوت نہ کردیں اس لیے انہوں نے پابندی لگادی۔

خیال رہے کہ سنہ افریقی ملک برونڈی میں وقتاً فوقتاً حکومت کا تختہ الٹنے کی کوشش ہوتی رہتی ہے، صدر پائیر انکورونزیزا کے سنہ 2005 میں اقتدار میں آنے کے بعد 3 لاکھ شہری قتل ہوئے تھے۔ برونڈی میں 2005 کے بعد مسلسل خانہ جنگی چل رہی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ برونڈی افغانستان کے بعد دنیا میں دوسرا ملک ہے جہاں خانہ جنگی کے باعث سب سے زیادہ بچے غذائی کمی کا شکار ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں