The news is by your side.

Advertisement

مورو پولیس نے 14 ماہ کے بچے کو ڈاکوؤں کا سرغنہ قرار دے دیا

مورو: مورو پولیس نے تھانہ درس میں 14 ماہ کے بچے فرحان پر ڈکیتی کے الزام میں مقدمہ درج کرکے گرفتاری کے لیے چھاپے مارے۔

تفصیلات کے مطابق مورو پولیس نے 14 ماہ کے بچے کو ڈاکوؤں کا سرغنہ قرار دے دیا جب کہ چودہ ماہ کا معصوم بچہ جسے ٹھیک طریقے سے بیٹھنا تک نہیں آتا اور جو اپنی بات بھی نہیں سمجھا سکتا اُسے مورو پولیس کی جانب سے جرائم پیشہ افراد کا سرغنہ قراردے دیا گیا ہے۔


Police book infant in Motorbike theft case!! by arynews

ذرائع کے مطابق کمسن بچے پر موروپولیس نے 392 کے تحت ڈکیتی کا مقدمہ درج کیا بچے کے والد شیر محمد نے بتایا کہ مورو پولیس نے بااثر شخصیات کے اشارے پر معصوم بیٹے پرجھوٹا مقدمہ درج کرکے اُن کے اہل خانہ کو ہراساں کیا جا رہا ہے اس لیے نو منتخب وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور آئی جی سندھ اس معاملے کا نوٹس لے کر ہمیں انصاف دلائیں۔

واضح رہے مورو کے علاقے میں ایک طرف تو ڈکیتی وارداتیں تیزی سے بڑھتی جا رہی ہیں تو دوسری طرف پولیس اس قسم کے مضحکہ خیز کیس میں اپنی توانائی صرف کررہی ہیں جس کا خمیازہ علاقہ مکینوں کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں