The news is by your side.

Advertisement

عراقی شہر موصل میں آپریشن،داعش کے 800سےزائد دہشتگرد ہلاک

بغداد : امریکی فوج کا کہناہے کہ عراق کے شہر موصل میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ کے خلاف آپریشن میں داعش کے800سے زائد دہشت گرد مارے گئے ہیں۔

تفصیلات کےمطابق امریکی  فوج  کی سینٹرل کمانڈ کے سربراہ جنرل جوزف ووٹل کا عراقی شہر موصل میں آپریشن کے دوران داعش کے مارے جانے والے دہشت گردوں کی حتمی تعداد بتانا مشکل ہے کیو نکہ یہ شہر میں اپنی پوزیشنز تبدیل کرتے رہتے ہیں۔

جنرل جوزف ووٹل کا کہناہےکہ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران ایک اندازے کے مطابق تقریباََ 800سے 900 کے درمیان داعش کے جنگجو مارےگئے۔

دوسری جانب داعش کے خلاف آپریشن میں اب تک عراقی فوج کے  57 اہلکارجاں بحق اور 250 زخمی ہوئے ہیں۔اس کے علاوہ آپریشن میں 20 سے 30 کرد جنگجو بھی جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

موصل عراق میں داعش کا آخری گڑھ ہے اور اس کےدہشت گردوں نے سنہ 2014 میں شہر پر قبضہ کیا تھا۔موصل ہی میں دولت اسلامیہ کے رہنما ابو بکرالبغدادی نے عراق اور شام میں اپنے زیر کنٹرول علاقوں میں خلافت کا اعلان کیا تھا۔

مزید پڑھیں:عراقی فوج کا داعش کے خلاف موصل میں آپریشن

 یاد رہےکہ گزشتہ ہفتے عراقی وزیراعظم حیدرالعبادی کاکہنا تھا کہ اب داعش کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کاوقت آگیا ہےاور ہم عوام کو داعش کے ظلم اور دہشت گردی سے نجات دلا کر رہےگیں۔

  مزید پڑھیں:عراق میں داعش نےبچوں سمیت 280افرادکوقتل کردیا

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتےموصل میں داعش نے284 بچوں اور نوجوان لڑکوں کو قتل کیا تھااورداعش نے ان افراد کی لاشوں کو اجتماعی قبروں میں دفنانے کے لیے موصل کے کالعدم ایگری کلچر کالج میں بلڈوزرز کااستعمال کیاتھا

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں