The news is by your side.

Advertisement

سکھر: ماں نے نابالغ لڑکی شادی کے لیے فروخت کر دی

سکھر: صالح پٹ میں نابالغ لڑکی کی شادی کرانے کے معاملے میں میڈیکل بورڈ کی رپورٹ نے اے آر وائی نیوز کی رپورٹ درست ثابت کر دی۔

تفصیلات کے مطابق 11 روز قبل صالح پٹ میں بچی ضمیراں کلہوڑو کی شادی کرائی جا رہی تھی، تاہم اے آر وائی نیوز کی ٹیم نے پولیس کے ہم راہ کارروائی کرتے ہوئے شادی رکوا دی تھی۔

آج سِول اسپتال سکھر کے میڈیکل بورڈ نے رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا کہ ضمیراں کلہوڑو کی عمر 15 سال ہے، شادی کے لیےعمر 18 سال ہونا لازمی ہے۔

سکھر میڈیکل بورڈ نے اپنی رپورٹ میں بچی کو نا بالغ قرار دے دیا، بچی کی والدہ کوڑی نے اسے 2 لاکھ 60 ہزار میں شادی کے لیے فروخت کیا تھا، تاہم کارروائی کے دوران پولیس نے دولہا حبدار علی کے ساتھ بچی کی والدہ کو بھی گرفتار کر لیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  شقی القلب ماں نے 2 بچے پانی کی ٹینکی میں ڈبو دیے

واضح رہے کہ آج لاہور کے علاقے رائیونڈ میں ایک شقی القلب ماں نے اپنے ہی ہاتھوں اپنے دو بچوں کو شوہر کے ساتھ جھگڑے کے بعد پانی کی ٹینکی میں پھینک کر جان سے مار دیا ہے، بچوں کے قتل کے بعد اس نے اپنی گردن پر بھی چھری ماری، تاہم وہ بچ گئی۔

ادھر آج راولپنڈی میں بھی 7 سال کی ایک معصوم بچی مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر دی گئی، ملزم گھر کا فرد نکلا، پولیس نے زیادتی کے شبہے میں بچی سدرہ کے چچا کو حراست میں لے لیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں