اقتدار سے محرومی کی تلخی مولانا فضل الرحمان کے لہجے میں آگئی، الیکشن پر پھر کڑی تنقید -
The news is by your side.

Advertisement

اقتدار سے محرومی کی تلخی مولانا فضل الرحمان کے لہجے میں آگئی، الیکشن پر پھر کڑی تنقید

پشاور : اقتدار سے دوری مولانا فضل الرحمان کے سینے پر سانپ بن کر لوٹنے لگی، ان کا کہنا ہے کہ حکومت کو مہلت دینا جعلی الیکشن تسلیم کرنے کے مترادف ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق عام انتخابات میں شکست کے بعد جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو اقتدار سے دوری برداشت نہیں ہورہی۔

پشاور میں علماء کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے وہ حالیہ شفاف ترین الیکشن کو جعلی قرار دے کر موجودہ منتخب حکومت گرانے کیلئے مچلتے نظر آئے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو مہلت دینا جعلی الیکشن تسلیم کرنے کے مترادف ہوگا، اپوزیشن کی بڑی جماعتوں نے ان کا ساتھ چھوڑا تو اب وہ شکوے شکایتوں پر اتر آئے۔

صدارتی انتخاب میں شکست کھانے والے مولانا اس وقت سیاسی طور پر تنہائی کا شکار ہیں، ان کو پی ٹی آئی ایک بلا نظر آنے لگی، انہوں نے ایک رٹ لگا رکھی ہے کہ الیکشن جعلی ہیں، الیکشن غلط ہیں، حالانکہ انہوں نے اسی حکومت کا حصہ بننے کیلئے صدارتی انتخاب میں بھی حصہ لیا تھا جس میں انہیں بری طرح شکست ہوئی۔

واضح رہے کہ ساری دنیا پی ٹی آئی کی نئی حکومت کے ساتھ ہے لیکن مولانا کو تو یہ عالمی سازش دکھائی دے رہی ہے، مسلسل اقتدار میں رہنے والے مولانا فضل الرحمان کو شاید اقتدار سے کچھ دن بھی باہر رہنا گوارا نہیں ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں