The news is by your side.

Advertisement

بھارت: وزیر اعلیٰ نے مسلمانوں کے گھروں اور دکانوں پر بلڈوزر چلوا دیا

بھوپال: بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ نے مسلمانوں کے گھروں اور دکانوں پر بلڈوزر چلوا دیا۔

تفصیلات کے مطابق مدھیہ پردیش میں مذہبی فسادات کے بعد مودی سرکار نے مسلمانوں کو ہی مورد الزام ٹھہراتے ہوئے سزا سنا دی، وزیر اعلیٰ نے مسلمانوں کے گھر اور دکانیں گرانے کا حکم دے دیا۔

شہر خارگون کے علاقے میں مسلمانوں کے 16 مکانات اور 29 دکانوں پر بلڈوزر چلا کر مسلمان شہریوں کو سر کی چھت اور روزگار کے ذرائع سے محروم کر دیا گیا۔

مسلم رکن اسمبلی اسدالدین اویسی نے اس ظالمانہ اقدام کی شدید مذمت کی، انھوں نے کہا مسلمانوں کے گھر گرانا غیر قانونی ہے، وزیر اعلیٰ مسلمانوں کو کس جرم کی سزا دے رہے ہیں۔

گھر گرانے کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس پر لوگوں نے سپریم کورٹ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

بھارتی پولیس نے پاکستانی ملی نغمہ سننے پر دو مسلمان لڑکوں کو گرفتار کر لیا

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے ہندو مذہبی تہوار کی ریلی کے دوران مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز تقاریر اور نعرے بازی کے واقعات کے بعد مختلف بھارتی ریاستوں میں ہنگامے پھوٹ پڑے تھے۔

بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں مذہبی فسادات عروج پر ہیں، ہندوؤں نے مسلمان کو نشانے پر لے لیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں