The news is by your side.

Advertisement

مریم نوازکی پیشی پر ہنگامہ آرائی ، گرفتار58 لیگی کارکنان 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پرجیل منتقل

لاہور: مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی پیشی کے دوران ہنگامہ آرائی کے الزام میں گرفتار58 لیگی کارکنان کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا ، گرفتار افراد میں (ن)لیگ کےایم پی اےعدنان فریدبھی شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق مطابق جوڈیشل مجسٹریٹ ذوالفقار باری کی عدالت میں مریم نوازکی پیشی کے دوران ہنگامہ آرائی کے الزام میں گرفتار58 لیگی کارکنان کو پیش کیا گیا ، ،وکیل ملزمان نے کہا پرامن احتجاج ہر شہری کا بنیادی حق ہے ، پولیس نے غیر قانونی طور ہر مقدمے میں ملوث کیا ،عدالت ملزمان کو مقدمہ میں سے ڈسچارج کرنے کا حکم دے۔

جس کے بعد عدالت نے 58 لیگی کارکنان کو14روزہ جوڈیشل ریمانڈپرجیل بھیج دیا ، گرفتار افرادمیں (ن)لیگ کےایم پی اےعدنان فریدبھی شامل ہیں، لیگی کارکنان کونیب دفترکےباہرپتھراؤ کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں: نیب پیشی پر ہنگامہ آرائی، مریم نواز اور 300 افراد کے خلاف مقدمہ درج

یاد رہے مریم نواز کی نیب میں پیشی کے موقع پر صورتحال کشیدہ ہوگئی تھی، نیب دفتر کے باہر لیگی کارکنان کی جانب سے پولیس پر پتھراؤ کیا گیا جبکہ لیگی کارکنوں نے نیب دفتر کے باہر رکاوٹیں ہٹادیں تھیں۔

پولیس کی جانب سے لیگی کارکنوں کومنتشر کرنے کیلئے نیب آفس کے باہر واٹر کینن بھی طلب کی تھی، لیگی کارکنان گاڑی ایل ای 3378میں پتھر سےبھرے شاپرلیکرآئے تھے ، لیگی کارکنوں نے گاڑی کےاندر سے پتھر نکال کر پولیس پر برسائے تھے۔

لیگی کارکنوں کے پتھراؤ کے باعث نیب دفتر پرکھڑیوں کے شیشےٹوٹ گئے جبکہ لیگی کارکنان نے نیب دفتر کے باہر بیریئر بھی توڑنےکی کوشش کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں