ایم کیو ایم اور جے ڈی اے کا رابطہ، سندھ اسمبلی میں مشترکہ اپوزیشن لیڈر لانے پر اتفاق
The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم اور جے ڈی اے کا رابطہ، سندھ اسمبلی میں مشترکہ اپوزیشن لیڈر لانے پر اتفاق

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان اور گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس نے سندھ میں پیپلزپارٹی کو ٹف ٹائم دینے کے لیے مشترکہ اپوزیشن لیڈر لانے پر اتفاق کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ میں پیپلزپارٹی کوٹف ٹائم دینےکیلئےاپوزیشن جماعتیں متحرک ہوگئیں، ایم کیو ایم پاکستان اور گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کی قیادتوں کے مابین رابطہ ہوا جس میں مضبوط،متحرک اور متفقہ اپوزیشن لیڈر لانے پر اتفاق ہوا۔

ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم کی جانب سے اپوزیشن لیڈر کے لیے خواجہ اظہار الحسن کا نام دیا گیا جبکہ تحریک انصاف نے فردوش شمیم نقوی  کو قائد حزب اختلاف لانے پر غور شروع کردیا۔

مزید پڑھیں: ایم کیو ایم کا وزارت عظمیٰ کے لئے عمران خان کی حمایت کا اعلان

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم قیادت کو فردوش شمیم پر شدید تحفظات ہیں اور اُن کے پاس پارلیمانی تجربہ بھی نہیں علاوہ ازیں ایم کیو ایم کے 16 اراکین اسمبلی بھی پی ٹی آئی کے امیدوار سے ناراض ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر ایم کیو ایم پاکستان اور گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کا اتحاد ہوجائے تو اسمبلی اراکین کی عددی اکثریت بڑھ جائے گی کیونکہ ایم کیو ایم کے پاس 16 اور جے ڈی اے کی 10 نشستیں ہیں جبکہ تحریک انصاف کے پاس سندھ اسمبلی کی 23 نشستیں ہیں، اگر ایم کیو ایم اور جی ڈی اے کا اتحاد ہوجائے تو ممبران کی تعداد کُل ملا کر 26 ہوجائے گی اور اس طرح تحریک انصاف اپنا قائد حزب اختلاف نہیں لا سکے گی۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ اسمبلی میں فردوس شمیم نقوی کو اپوزیشن لیڈر بنائے جانے کا امکان

واضح رہے کہ ایم کیو ایم وفاق میں تحریک انصاف کی اتحادی جماعت ہے جبکہ دو روز قبل کراچی ڈویژن کے صدر شمیم نقوی نے متحدہ کے خلاف سخت بیان دیا تھا جس کے بعد دونوں جماعتوں میں تلخیاں شروع ہوگئیں تھیں البتہ پی ٹی آئی قیادت نے بیان کا نوٹس لیتے ہوئے صدر کراچی ڈویژن سے وضاحت طلب کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں