متحدہ کا مردم شماری نتائج کے خلاف ریلی منسوخ کرنے کا فیصلہ mqm rally
The news is by your side.

Advertisement

متحدہ کا مردم شماری نتائج کے خلاف ریلی منسوخ کرنے کا فیصلہ

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان نے مردم شماری نتائج کے خلاف 16 ستمبر کو نکالی جانے والی ریلی منسوخ کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے مرکز بہادر آباد میں رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں خواجہ اظہار پر ہونے والے حملے اور اُس کے بعد پیدا ہونے والی سیکیورٹی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

متحدہ ذرائع کے مطابق اجلاس میں سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر 16 ستمبر کی ریلی کو منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا گیا جس کا باضابطہ اعلان کل پریس کانفرنس کے ذریعے کیا جائے گا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے مرکز پر ہونے والی پریس کانفرنس میں ڈاکٹر فاروق ستار آئندہ کے لائحہ عمل کا بھی اعلان کریں گے جبکہ خواجہ اظہار پر ہونے والے حملے اور کارروائیوں سے متعلق بھی اہم نکات اٹھائیں گے۔

پڑھیں: مردم شماری میں شہری آبادی دیوارمیں چُنوادی گئی، فاروق ستار

یاد رہے کہ مردم شماری کے نتائج سامنے آنے کے بعد ایم کیو ایم نے شدید احتجاج کرتے ہوئے اسے دھاندلی زدہ قرار دیا تھا اور 10 ستمبر کو ریلی نکالنے کا اعلان بھی کیا تھا تاہم سیکیورٹی خدشات کی بناء پر ریلی کو 16 ستمبر تک ملتوی کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ بائیس اگست کو ایک سال مکمل ہونے پر ایم کیو ایم کی جانب سے آل پارٹیز کانفرنس بلائی گئی تھی جس میں سیاسی جماعتوں نے شرکت سے انکار کردیا تھا جبکہ  پی ایس پی، ایم کیو ایم حقیقی اور آل پاکستان مسلم لیگ نے آمادگی ظاہر کردی تھی۔

سیاسی جماعتوں کی عدم شرکت پر ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ نے پریس کانفرنس میں سیاسی جماعتوں سے گلے شکوے کرتے ہوئے کہا تھا کہ جنہوں نے ہمارا بائیکاٹ کیا اب لوگ اُن کا بائیکاٹ کریں گے، ہم نے وطن سے محبت کے لیے ہر قدم اٹھایا لہذا ہمیں تسلیم کیا جائے۔

یہ بھی یاد رہے کہ رواں ماہ کی 2 تاریخ کو نماز عید کی ادائیگی کے بعد متحدہ رہنماء خواجہ اظہار پر نامعلوم افراد کی جانب سے قاتلانہ حملہ کیا گیا تھا جس میں وہ محفوظ رہے تھے جبکہ اُن کی حفاظت پر مامور پولیس اہلکار نے جام شہادت نوش کیا تھا، محافظوں کی فائرنگ سے ایک حملہ آور ہلاک ہوا جس کی شناخت ڈاکٹر حسان کے نام سے ہوئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں