The news is by your side.

Advertisement

پی پی اور ایم کیوایم نیا بلدیاتی نظام لانے پر متفق

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے وفد نے شریک چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی سے ملاقات کی ہے، جس میں دونوں جماعتوں نے مستقبل میں بھی ساتھ مل کر چلنے پر اتفاق کیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق سابق صدر آصف زرداری سے ایم کیوایم کے وفد نے بلاول ہاؤس میں ملاقات کی ہے، وفد میں خالد مقبول صدیقی، کنور نوید جمیل اور دیگر رہنما شامل تھے۔ ملاقات کے دوران سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ملاقات میں صدر مملکت کی جانب سے آئینی کردار نہ ادا کرنے پر تنقید کی گئی، ایم کیو ایم رہنماؤں نے کہا کہ وزیراعظم نے نسرین جلیل کو گورنر بنانے کی سمری ارسال کر رکھی ہے، لیکن صدر تاخیری حربے استعمال کررہے ہیں۔

آصف زرداری نے ایم کیو ایم کو سندھ حکومت میں شمولیت کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ ایم کیوایم جب چاہیے سندھ کابینہ کا حصہ بن سکتی ہے، ہمارے دروازے کھلے ہیں۔

ملاقات میں ایم کیوایم کو کے ایم سی میں بھرپور نمائندگی دینے اور نیا بلدیاتی نظام مل کر لانے پر اتفاق کیا گیا ہے، جبکہ بلدیاتی نظام سے متعلق سلیکٹ کمیٹی کے فیصلوں کو آگے بڑھانے پر بھی اتفاق کیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ملاقات میں 48 گھنٹے میں بلدیاتی نظام کی تاریخ آگے بڑھانے پر بھی گفتگو کی گئی، ایم کیوایم اور پیپلز پارٹی نے مستقبل میں بھی ساتھ مل کر چلنے پر اتفاق کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں