The news is by your side.

Advertisement

مردم شماری میں شہری آبادی دیوارمیں چُنوادی گئی، فاروق ستار

کراچی: سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار نے 10 سمتبر کو مزار قائد پر احتجاج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کی شہری آبادی کو دیوار میں چُنو دیا گیا یہ جبری اور دھاندلی زدہ نتائج ہیں جسے یکسر مسترد کرتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ان کا کہنا تھا کہ کراچی کے ساتھ ناانصافی  پاکستان کے ساتھ زیادتی ہے جسے مسترد کرتے ہیں۔

سربراہ ایم کیو ایم پاکستان نے کہا کہ مردم شماری کے اعداد و شمار میں سندھ کی شہری آبادی کو جان بوجھ کر کم ظاہر کیا گیا ہے جو کہ خطرناک رجحان ہے کیوں کہ کراچی معاشی حب ہے، ترقی کا انجن ہے اگر کراچی کی ہی آبادی کم دکھائی جائے گی تو اس سے ملک کی معیشت پر اچھا اثرنہیں پڑے گا۔

ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ آبادی کو کم ظاہر کرنا صرف ایم کیو ایم کا نہیں بلکہ سندھ میں رہنے والے تمام قومیتوں کا مسئلہ ہے، سندھ کی شہری آبادی کو جان بوجھ کر کم ظاہر کیا گیا ہے جیسا کہ ماضی کی مردم شماریوں میں بھی ہوتا آیا ہے اور اس بار تو کراچی کی آبادی کو دیوار ہی میں چنوادیا گیا ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ نے سوالات اُٹھائے کہ آیا یہ کراچی کی آبادی بتائی گئی ہے یا صرف نیوکراچی کی ؟ اور مردم شماری کے اعداد و شمار میں سے کیا سندھ میں آباد لوگوں کو یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ وہ تیسرے درجے کے شہری ہیں؟ آخر کراچی کو تنہا کرنے کی کوشش کیوں جارہی ہے؟

اس مو قع پر انہوں نے اعلان کیا کہ مردم شماری کے خلاف 10 ستمبر کو مزار قائد پر احتجاج کیا جائے گا جس کے لیے دیگر سیاسی جماعتوں سے بھی مشاورت کا عمل جاری ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں