The news is by your side.

Advertisement

ڈپٹی میئر کراچی کا انتخاب، ایم کیو ایم نے ارشد حسن کا نام فائنل کردیا

کراچی: ڈپٹی میئر کراچی کی خالی نشست پر انتخاب لڑنے کے لیے 5 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے، ایم کیو ایم پاکستان کے دو امیدواروں نے کاغذات جمع کرائے۔

تفصیلات کے مطابق ارشد وہرہ کی نااہلی کے بعد خالی ہونے والی نشست پر ایم کیوایم پاکستان نےڈپٹی مئیر کے لیے ارشدحسن کانام فائنل کردیا جبکہ متحدہ پاکستان کے ہی منصور احمد نے بطور کوررینگ امیدوار کاغذات جمع کرائے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان میں ڈپٹی میئر کا انتخاب لڑنے کے لیے 5امیدواروں نے کاغذات جمع کرائے، جن میں پیپلزپارٹی، مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کا ایک ایک امیدوار بھی شامل ہے جبکہ ایم کیوایم کے ارشد حسن اور منصور احمد نےکاغذات جمع کرائے۔

مزید پڑھیں: کراچی، ڈپٹی میئر کا انتخاب، 5 امیدواروں نے نامزدگی فارمز جمع کرادئیے

یاد رہے کہ ڈپٹی میئرکی خالی نشست پرانتخاب 18 اپریل کو ہوگا جس میں بلدیہ عظمیٰ کراچی سٹی کونسل کے 302 سے زائد ارکان حق رائےدہی استعمال کریں گے۔

واضح رہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ایم کیو ایم پاکستان کے سابق سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کی جانب سے دائر درخواست پر 13 مارچ کو فیصلہ سناتے ہوئے پاک سرزمین پارٹی کے رہنما ارشد وہرہ کو ڈپٹی میئر کے عہدے کے لیے نااہل قرار دیا تھا۔

الیکشن کمیشن نے فیصلے میں کہا تھا کہ کراچی کے ضلع وسطی کی یونین کونسل 49 سے منتخب ہونے والے ارشد وہرہ کی نا اہلی پارٹی تبدیل کرنے کے سبب عمل میں لائی گئی۔

یہ بھی پڑھیں: ایم کیو ایم پاکستان نے اپنا ڈپٹی میئر لانے کی تیاریاں شروع کردیں

ارشد وہرہ اکتوبر 2017 میں ایم کیو ایم پاکستان چھوڑ کر پاک سرزمین پارٹی میں شامل ہوگئے تھے ، سیاسی جماعت تبدیل کرتے وقت وہ ڈپٹی میئر کراچی کے عہدے پر فائز تھے انہیں ایم کیو ایم کے بلدیاتی نمائندگان کے ووٹوں سے منتخب کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں