site
stats
پاکستان

باہر والوں کو کراچی میں جلسے کی اجازت دے دی جاتی ہے، آفاق احمد

کراچی: مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد نے کہا ہے کہ باہر سے آنے والے لوگوں کو شہر میں جلسے کی اجازت دے دی جاتی ہے جبکہ ہمیں اس شہر کا باسی ہونے کے باوجود جلسے کی اجازت نہیں دی جارہی۔

اپنی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آفاق احمد نے اجازت نہ ملنے پر جلسہ منسوخ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ پیر کو انتظامیہ سے دوبارہ جلسے کی اجازت کے لیے درخواست دیں گے اگر اجازت نہ ملی تو ہائی کورٹ جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف، جماعت اسلامی سمیت باہر سے آنے والی جماعتوں کو کراچی کے کسی بھی علاقے سیاست کی اجازت ہے جبکہ مہاجروں کو سیاسی سرگرمیوں کی کوئی اجازت نہیں ہے۔

آفاق احمد نے کہا کہ ایک خاص ایجنڈے کے تحت پی ایس پی جیسی جماعت کو مسلط کیا گیا تاکہ مہاجر قوم کو تقسیم در تقسیم کیا جا سکے، بانی متحدہ کا راستہ ایسے طریقوں سے نہیں روکا جاسکتا بلکہ مہاجر قوم کے مسائل حل کر کے معاملات اور احساس کمتری کو ختم کیا جاسکتا ہے۔

چیئرمین مہاجر قومی موومنٹ کا کہنا تھا کہ مقتدر حلقے کراچی کی صورتحال کا نوٹس لیں، ایسے اقدامات سے تصادم کی صورتحال پیدا ہوگی جبکہ ہم کسی صورت تصادم نہیں چاہتے۔ آفاق احمد نے کہا کہ سندھ حکومت مہاجر سیاست سے خوفزدہ ہے اس لیے اداروں کا نام استعمال کر کے ہمیں جلسے کرنے سے روک رہی ہے۔

آفاق احمد کا مزید کہنا تھا کہ مہاجر عوام اپنے مسائل کا حل چاہتے ہیں اور ہم اپنے اتحاد سے تمام معاملات و مصائب سے جلد نکل جائیں گے، مہاجروں کو دیوار سے لگانے کے عمل کے باوجود ہم پرامن اور متحد ہیں۔

یاد رہے مہاجر قومی موومنٹ کی جانب سے 23 جولائی کو لانڈھی کے بیت الحمزہ گراؤنڈ میں جلسے کا اعلان کیا گیا تھا تاہم سیکیورٹی خدشات کی بناء پر حساس اداروں اور انتظامیہ نے جلسہ کرنے کی اجازت نہیں دی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top