The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم رہنما گلفراز خٹک کو14روزہ عدالتی تحویل پر جیل بھیج دیا گیا

کراچی : ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما گلفراز خٹک کوچودہ روزہ عدالتی تحویل پر جیل بھیج دیا گیا جبکہ اشتعال انگیزتقریر کے مقدمے میں ایم کیو ایم رہنما خواجہ اظہارالحسن کو عبوری ضمانت مل گئی ہے۔

میڈیا ہاوسز پر حملے اور اشتعال انگیز تقاریر کیس کی سماعت ہوئی، کراچی کی انسداد دہشت گردی کی منتظم عدالت میں سماعت کے دوران تفتیشی افسر نے کہا کہ گلفراز خٹک اور دیگر رہنماوں کے خلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں، گلفراز خٹک اشتعال انگیز تقریر کے وقت وہاں موجود تھے اور انہوں نے تقریر کی تائید کی تھی۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے گلفراز خٹک کو چودہ روز کیلئے عدالتی ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔


مزید پڑھیں : ایم کیو ایم کے رہنما گلفراز خٹک گرفتار


یاد رہے کہ رینجرزنے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما اوررابطہ کمیٹی کے اہم رکن گلفرازخٹک کوانسداد دہشت گردی کی عدالت سے باہر نکلتے ہوئے حراست میں لیا تھا۔

واضح رہے کہ رکن رابطہ کمیٹی گلفراز خٹک پر میڈیا ہاؤس پر حملے، پاکستان مخالف تقریر کرنے میں سہولت کار بننے، اشتعال انگیزی پھیلانے اور بغاوت سمیت کئی اہم الزامات ہیں۔

دوسری جانب اشتعال انگیز تقاریر سمیت مئیر کراچی وسیم اختر کیخلاف تین مقدمات میں درخواست ضمانت کی فوری سماعت کی استدعا منظور کرلی گئی، دس اکتوبر کو درخواست ضمانت پر دلائل دیے جائیں گے۔

انسداد دہشت گردی عدالت نے اشتعال انگیزتقریر کے مقدمے میں اپوزیشن لیڈر سندھ خواجہ اظہار الحسن کی عبوری ضمانت منظورکرلی۔

واضح رہے کہ خواجہ اظہار الحسن، رﺅف صدیقی ، فاروق ستار اور دیگر رہنماؤں کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر میں سہولت کاری کا مقدمہ چل رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں