The news is by your side.

Advertisement

لندن رابطہ کمیٹی کے مومن خان مومن اور ظفر راجپوت ضمانت پر رہا

حیدرآباد: ایم کیو ایم لندن کے گزشتہ روز گرفتار ہونے والے رہنماء مومن خان مومن اور ظفر راجپوت کو اسپیشل مجسٹریٹ کی عدالت نے 10،10 ہزار روپے کی ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز ایم کیو ایم لندن کے خلاف شروع ہونے والے کریک ڈاؤن کے بعد حیدرآباد سے گرفتار ہونے والے پاکستان میں موجود رہنماء مومن خان مومن اور ظفر راجپوت کو پولیس نے اسپیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا۔

عدالت نے رہنماؤں کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیتے ہوئے دونوں افراد کو 10 ، 10 ہزار روپے کے مچلکے جمع کروانے کی ہدایت جاری کیں اور پولیس کو فوری طور پر دونوں رہنماؤں کو رہا کرنے  کے احکامات دئیے۔

پڑھیں: متحدہ لندن کے رہنما حسن ظفر اور کنور خالد پریس کلب سے زیر حراست

 یادرہے ایم کیو ایم لندن کی جانب سے پاکستان میں نامزد کردہ اراکین رابطہ کمیٹی حسن ظفر، کنور خالد یونس اور امجد اللہ امجد کو گزشتہ روز کراچی پریس کلب کے باہر سے رینجرز نے حراست میں لے کر تفتیش کے لیے میٹھا رام اسپتال منتقل کیا تھا تاہم رات گئے نقصِ امن کے پیش نظر تینوں رہنماؤں کو سینٹرل جیل منتقل کردیا گیا۔

مزید پڑھیں: متحدہ رہنما امجد اللہ پریس کلب سے باہر نکل آئے، رینجرز نے گرفتار کرلیا

دوسری جانب قانون نافذ کرنے والے اداروں نے حیدرآباد کے مختلف علاقوں میں کارروائی کرتے ہوئے لندن رابطہ کمیٹی کے پاکستان میں نامزد کردہ رہنماؤں ظفر راجپوت، مومن خان مون کو حراست میں لے کر پولیس کے حوالے کردیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  ایم کیو ایم رہنماؤں کی گرفتاریاں قابل مذمت ہیں، رہا کیا جائے، ندیم نصرت

 قبل ازیں ایم کیو ایم پاکستان نے تنظیمی نظم و ضبط کی سنگین خلاف ورزی کرنے پر ظفر راجپوت سمیت سندھ تنظیمی کمیٹی کے متعدد ذمہ داران اور حیدرآباد سے تعلق  رکھنے والے کارکنان کی بنیادی رکنیت ختم کرنے کا بھی اعلان کرتے ہوئے تمام لوگوں کو مذکورہ افراد سے کسی بھی قسم کا رابطہ نہ رکھنے کی ہدایت جاری کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں