The news is by your side.

Advertisement

متحدہ لندن قیادت نے نئی رابطہ کمیٹی کا اعلان کردیا

لندن: کنوینر ایم کیو ایم ندیم نصرت کی زیر صدارت رابطہ کمیٹی کا اجلاس منعقد کیا گیا جس میں متحدہ قومی موومنٹ نے 12 رکنی عبوری رابطہ کمیٹی کے لیے مختلف ناموں کا اعلان کردیا، بانی تحریک نے کنوینر اور قیادت کے فیصلوں کی توثیق کردی۔

لندن سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ کنوینر ایم کیو ایم ندیم نصرت کی زیر صدارت اہم اجلاس منعقد کیا گیا جس میں متحدہ قومی موومنٹ کی پاکستان رابطہ کمیٹی کے حوالے سے مشاورت کے بعد 12 رکنی عبوری کمیٹی تشکیل دینے کا اعلان کیا گیا۔

لندن کی جانب سے اعلان کردہ کمیٹی میں ڈاکٹر حسن ظفر عارف، ساتھی اسحاق ایڈووکیٹ، مومن خان مومن، امجد اللہ خان، کنور خالد یونس، اشرف نور، اکرم راجپوت، اسماعیل ستارہ اور ادریس علوی شامل ہیں تاہم لندن رابطہ کمیٹی میں واسع جلیل، ڈاکٹر ندیم احسان اور مصطفیٰ عزیز آبادی کو اورسیز کے معاملات دیکھنے کی ذمہ داری دی گئی ہے۔

پڑھیں:  لندن ایم کیو ایم نے عامرخان،خواجہ اظہار،فیصل سبزواری،کشورزہرا کی بنیادی رکنیت ختم کردی

 اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عبوری رابطہ کمیٹی میں وقت کے ساتھ مزید اراکین کا اضافہ کیا جائے گا اور پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی، لیبرڈویژن، شعبہ خواتین سمیت دیگر تمام شعبہ جات کے لیے نئے ذمہ داران کے ناموں کا اعلان اگلے مرحلے میں کیا جائے گا۔

لندن قیادت نے فیصلہ کیا ہے کہ کراچی کی سطح پر قائم 26 سیکٹروں اور حیدرآباد میں نئے تنظیمی سیٹ اپ کا اعلان جلد کیا جائے گا تاہم سندھ کے دیگر زونز کا تنظیمی ڈھانچہ برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ بانی ایم کیو ایم نے لندن قیادت اور کنوینر کی جانب سے کیے گئے تمام فیصلوں کی توثیق کردی ہے۔

mqm-london

یاد رہے کہ 22 اگست کو متنازع تقریر کے اگلے روز ڈاکٹر فاروق ستار سمیت ایم کیو ایم کے اراکین پارلیمنٹ نے بانی تحریک اور لندن قیادت سے لاتعلقی کا اعلان کیا تھا، بعد ازاں ایم کیو ایم کے پارٹی پرچم سے بانی تحریک کی تصویر اور پارٹی آئین میں ترمیم کی گئی جس کے تحت الطاف حسین سے ویٹو پاور چھین لی گئی تھی۔

مزید پڑھیں: لندن ایم کیو ایم نےفاروق ستارکی بنیادی رکنیت منسوخ کردی

علاوہ ازیں ایم کیو ایم نے اسمبلیوں میں بانی تحریک کے خلاف پیش ہونے والی قراردادوں کی حمایت کا اعلان کیا تھا اور اپنے ہی قائد کے خلاف آرٹیکل 6 کے تحت مقدمہ چلانے کی تجویز بھی دی گئی تھی نیز یہ کہ رابطہ کمیٹی کے کنونیر سمیت تمام افراد کو پارٹی سے نکالنے کا بھی اعلان کیا تھا۔

اسے سے متعلق: اگر متحدہ بانی کو واپس لایا گیا تو میں کام نہیں کروں گا، فاروق ستار

 بعد ازاں بانی ایم کیو ایم نے لندن سے اپنے کارکنوں کے نام آڈیو پیغام جاری کیا جس میں کارکنوں کو پی آئی بی مرکز جانے سے روکنے کی ہدایت کی گئی تھی تاہم اگلے ویڈیو پیغام میں قائد ایم کیو ایم نے ارکین اسمبلی سے مستعفیٰ ہوکر الیکشن لڑنے کا مطالبہ کیا اور سربراہ ایم کیو ایم ڈاکٹر فاروق ستار سمیت چار اہم رہنماؤں کی بنیادی رکنیت ختم کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  لندن کے بیان سے کوئی تعلق نہیں، ایم کیو ایم پاکستان

 گزشتہ روز اے آر وائی نیوز کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں گفتگو کرتے ہوئے لندن میں مقیم ایم کیو ایم کے اہم رہنما واسع جلیل نے انکشاف کیا تھا کہ ’’ہمارے پاس متعدد افراد کے استعفے موجود ہیں تاہم ہم اپنے لوگوں کو مشکلات سے بچانے کے لیے اعلان نہیں کررہے‘‘۔

واسع جلیل نے مزید کہا تھاکہ ’’لندن کی جانب سے بہت جلد نئی رابطہ کمیٹی کے ناموں سمیت تمام شعبہ جات اور یونٹ و سکیٹر میں تنظیمی ٖڈھانچے کا اعلان کیا جائے گا‘‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں