The news is by your side.

Advertisement

ڈبل سواری پر پابندی کیخلاف ایم کیو ایم پاکستان میدان میں آگئی

کراچی : ایم کیو ایم پاکستان نے شہر قائد میں موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امن وامان کی خراب صورتحال حکومت سندھ کی بدعنوانی اور نااہلی کا شاخسانہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت کی جانب سے مولانا عادل خان کی ٹارگٹ کلنگ کے بعد کراچی میں ایک ماہ کےلیے ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس پر متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی جانب سے تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماوں نے کہا ہے کہ کراچی میں جرائم کے بڑھتے ہوئے واقعات حکومت سندھ کی نااہلی ثابت کرتی ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماوں نے کہا کہ موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد کرکے سندھ حکومت نے اپنی ناکامی کا اعتراف کرلیا ہے، سندھ حکومت جرائم کی بیخ کنی نہیں کرسکتی اور انتظامی طور پر بھی مکمل ناکام ہوچکی ہے۔

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان نے کہا کہ موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی سے غریب اور متوسط طبقے کے افراد اور طلبہ شدید متاثر ہوتے ہیں، سندھ حکومت لوگوں کے جان و مال کی حفاظت کی بنیادی ذمہ پوری کرے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت عوام سے سہولیات چھینے سے اجتناب برتے امن وامان کی خراب صورتحال حکومت سندھ کی بدعنوانی اور نااہلی کا شاخسانہ ہے، حکومت اپنی نااہلی کی سزا عوام کو دینے کے بجائے اپنا قبلہ درست کرے۔

ایم کیو ایم پاکستان کا مزید کہنا تھا کہ چیف جسٹس ہائیکورٹ اور گورنر سندھ موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی کا نوٹس لیتے ہوئے اسے فل فور ختم کرائیں۔

کراچی میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر فوری پابندی عائد

خیال رہے کہ کراچی میں ڈبل سواری پر ایک ماہ کےلیے پابندی عائد کردی گئی ہے، جس نوٹیفیکیشن محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے جاری کردیا ہے، پابندی امن وامان کی صورت حال کو برقرار رکھنے کے لیے لگائی گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں