The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم نے وزیراعلیٰ ہاؤس کے گھیراؤ کا عندیہ دے دیا

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی کا کہنا ہے کہ سندھ پبلک سروس کمیشن کے ذریعے میرٹ کا قتل ہورہا ہے، رابطہ کمیٹی اجازت دے تو وزیراعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سندھ پبلک سروس کمیشن کے ذریعے میرٹ کا قتل ہورہا ہے، سندھ حکومت صوبے کو پولیس اسٹیٹ بنانا چاہتی ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ لاڑکانہ سے 75 پولیس اہلکاروں کو کراچی میں تعینات کردیا گیا، کراچی تبادلہ کرکے لاڑکانہ میں نئے پولیس اہلکاروں کو بھرتی کیا جائے گا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر نے کہا کہ میرٹ کے نام پر اداروں کو بدعنوان، بے ایمان اور نااہل لوگوں کے حوالے کردیا گیا ہے، یہاں سے پاس ہونے والے ملک بھر میں نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہوں گے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ میرٹ کو جانچنے والے اداروں میں سب سے زیادہ کرپشن ہے، سندھ پبلک سروس کمیشن میں کون لوگ بیٹھے ہیں، ان کا ڈومیسائل کہاں کا ہے اور ان کی سیاسی وابستگیاں کس سے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حالات ہمیں سڑکوں پر آنے پر مجبور کررہے ہیں، حالات کی ساری ذمہ داری سندھ کے بدعنوان اور نسل پرست حکومت کی ہوگی۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما عامر خان کا کہنا تھا کہ سندھ میں دوسرے صوبے کے لیے زور و شور سے کام کریں گے، خواجہ اظہار کا کہنا تھا کہ رابطہ کمیٹی اجازت دے تو وزیراعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ کریں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں