site
stats
سندھ

اعلیٰ حکام متحدہ کارکنان کی بلاجوازگرفتاری کا نوٹس لیں، ایم کیو ایم پاکستان

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان) کی رابطہ کمیٹی نے قانون نافذ کرنے والے اداروں ، پولیس اور سادہ لباس اہلکاروں کی جانب سے شہر کے مختلف علاقوں میں ایم کیو ایم (پاکستان) کے کارکنان کے گھروں پر بلاجواز چھاپوں اور گرفتاریوں  کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔

کارکنان کی گرفتاریوں پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے گرفتاریوں کو ایم کیو ایم (پاکستان) کو سیاسی سرگرمیوں سے روکنے اور ہراساں کرنے کی کوشش قرار دیا ہے۔

ایک جاری بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں، پولیس اور سادہ لباس اہلکاروں کی جانب سے 27 اپریل سے آج تک ایم کیو ایم (پاکستان) کے 16 کارکنان کے گھروں پر بلاجواز چھاپے مار کر انہیں گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔

گرفتار کارکنان کی تاحال کسی کو کوئی اطلاع نہیں ہے۔ بلاجواز گرفتایوں کے باعث ان کے اہل خانہ شدید کرب اور ذہنی اذیت کا شکار ہیں۔

رابطہ کمیٹی (پاکستان) نے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثارعلی خان، وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور گورنر سندھ محمد زبیر سے مطالبہ کیا کہ ایم کیو ایم (پاکستان) کے کارکنان کے گھروں پر چھاپے اور گرفتاریوں کا نوٹس لیا جائے اور تمام کارکنان کو فی الفور رہا کروایا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top