The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم پاکستان نے سندھ کا بجٹ مسترد کردیا

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں نے سندھ حکومت کی جانب سے پیش کردہ بجٹ مسترد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے سندھ حکومت کی جانب سے پیش کردہ بجٹ مسترد کردیا، ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ وفاق کے بجٹ میں بھی شہری علاقوں کو نظر انداز کیا گیا ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی نسل پرست حکومت نے کراچی کا انفرا اسٹرکچر تباہ کردیا، ہم سندھ حکومت کے پیش کردہ بجٹ کو مسترد کرتے ہیں، پیپلزپارٹی اپنے اقدامات کے ذریعے سندھ کو تقسیم کرچکی۔

انہوں نے کہا کہ کراچی پاکستان کے 65 فیصد اور سندھ کے بجٹ میں 95 فیصد حصہ دیتا ہے، جو ٹیکس کراچی کے لوگ دے رہے ہیں ان پر خرچ نہیں کیا جاتا، پیپلزپارٹی کی نسل پرست حکومت نے صرف 10بسیں چلائیں، پیپلزپارٹی اپنے اقدامات کے ذریعے سندھ کو تقسیم کرچکی ہے۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ شہری علاقوں کا ٹیکس خود جمع کرائیں اور خرچ کریں تو کیسا رہے گا، پی پی 1988 میں گناہ بن کر سندھ پر نازل ہوئی، پیپلزپارٹی نازل نہ ہوتی تو کراچی میں دنیا کا بہترین ماس ٹرانزٹ سسٹم ہوتا۔

کنوینر ایم کیو ایم پاکستان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی جانب سے یقین دہانیاں کرائی گئی ہیں، امید ہے جو یقین دہانیاں کرائی گئی وہ شرمندہ تعبیر ہوں گی، حکومت سے وزارت سے متعلق کوئی بات نہیں ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ 11 سال سے لوٹ مار کرنے والوں کے استعفوں سے کچھ نہیں ہوگا، 11 سال سے لوٹ مار کرنے والوں کا احتساب ہونا چاہئے۔

پیپلزپارٹی کے ہر دور میں کراچی کے ساتھ زیادتی ہوئی، وسیم اختر

میئر کراچی وسیم اختر کا کہنا تھا کہ ہم نہیں سپریم کورٹ کے جج کہہ رہے ہیں سندھ میں روپیہ نہیں لگا، سینئر جج سپریم کورٹ کہتے ہیں زیادہ کرپشن صرف سندھ میں ہے، پیپلزپارٹی کے ہر دور میں کراچی کے ساتھ زیادتی ہوئی، پیپلزپارٹی نے ٹھیکیداروں کے ساتھ مل کر صرف کمائی کی، کرپشن کے لیے من پسند اسکیمیں بجٹ میں رکھی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گیارہ سال سے لوٹ مار کرنے والوں کا احتساب ہونا چاہئے، کے ایم سی کو ملنے والا بجٹ صرف تنخواہوں پر خرچ ہوتا ہے، ہر سال تنخواہ بڑھائی جاتی ہے پر کے ایم سی کا فنڈ نہیں بڑھایا جاتا، کراچی کے آدھے سے زیادہ پیسے سندھ حکومت اپنے پاس رکھ لیتی ہے۔

کراچی پیپلزپارٹی کی شکارگاہ ہے، خواجہ اظہار

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ وزیراعلیٰ نے اپنی نااہلی کو تسلیم کیا ہے، کراچی کو پانی ملتا ہے نہ روزگار ملتا ہے، کراچی کے شہری علاقوں کے ساتھ مسلسل ظلم ہورہا ہے، عوام کو پانی کے مسئلے پر جان بوجھ کر ترسایا جارہا ہے، کراچی پیپلزپارٹی کے لیے شکارگاہ ہے۔

پانچ سال میں کراچی پر کچھ پیسہ نہیں لگایا گیا، کنور نوید جمیل

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما کنور نوید جمیل نے کہا کہ اس سال 30 ارب کراچی کے لیے رکھے گئے ہیں، 5 سال میں کراچی پر کچھ پیسہ نہیں لگایا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں