The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم پاکستان نے شیڈو بجٹ پیش کردیا

اسلام آباد: وفاقی بجٹ کی آمد سے پہلے ایم کیو ایم پاکستان نے بھی شیڈو بجٹ پیش کردیا، ایم کیو ایم پاکستان نے بجٹ کا تیس فیصد ترقیاتی کاموں میں صرف کرنے کی تجویز دی ہے جبکہ تعلیم اور صحت کا بجٹ بھی بڑھا نے کی تجویز دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سربراہ ایم کیو ایم پاکستان فاروق ستار نے شیڈو بجٹ پیش کردیا، ایم کیو ایم پاکستان کا شیڈو بجٹ بجٹ کا 30 فیصد ترقیاتی کاموں پر صرف کرنے کی تجویز، امیروں پر ٹیکس بڑھانے اور تعلیم اور صحت کیلئے زیادہ فنڈز رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔

فاروق ستار کا کہنا ہے کہ غریبوں پر ٹیکس ختم کرنے کا بجٹ پیش کیاہے، ٹیکس چوری کو روکنا ہے، سیلز ٹیکس 9 فی صد پر لایا گیا، غریب کسان پر نہیں، وڈیروں اورجاگیر داروں پرانکم ٹیکس لگایا جائے۔

سربراہ ایم کیو ایم پاکستان نے کہا کہ سالانہ 10لاکھ روپے کی زرعی آمدن پر ٹیکس لگایا گیا ہے، پٹرولیم لیوی، بجلی، گیس پر سیلز ٹیکس بھتہ ہے اس کو ختم کیا جائے، ٹیکس دینے کے بعد بھی دیہی علاقوں میں18 گھنٹے لوڈشیڈنگ ہے۔

فاروق ستار کا کہنا تھا کہ ہم نے قرض لینے کو آدھا کیا جبکہ ترقیاتی بجٹ میں اضافہ کیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ حب میں کوئلہ کے پلانٹ کو ایم کیوایم مسترد کرتی ہے ،پلانٹ لگا تو کراچی 5 سال بعد رہنے کے قابل نہیں رہے گا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں