The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم پاکستان کا مصطفیٰ کمال کو ہرجانے کا نوٹس

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ پاکستان نے پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال سے 14 دن کے اندر اندر غیر مشروط معافی مانگنے کا مطالبہ کرتے ہوئے 5 کروڑ روپے ہرجانے کے دو نوٹس بھیجوا دیئے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پی ایس پی مصطفیٰ کمال کو ہرجانے کے نوٹس رکن قومی اسمبلی کنور نوید جمیل کی جانب سے بھیجوائے گئے جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ رکن قومی اسمبلی کی ساکھ کو بے سروپا الزام لگا کر نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی ہے جس پر 14 دن کے اندر معافی مانگی جائے۔

ترجمان ایم کیوایم پاکستان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ چیئرمین پاک سرزمین پارٹی مصطفی کمال نے سستی شہرت کے لیے رکن قومی اسمبلی کنور نوید جمیل سمیت دیگر اراکین پر بےبنیاد، لغو اور من گھڑت الزامات لگا کر معزز اراکین پارلیمنٹ کی ساکھ کو دانستہ طور پر نقصان پہنچانے کی کوشش کی ہے۔

یہی وجہ ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان نے اپنے لیگل ٹیم سے مشاورت کے بعد 14 دن کے غیر مشروط معافی کے مطالبے کے ساتھ پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال کو 5 کروڑ کے ہرجانے کے دو نوٹس رکن قومی اسمبلی اور سابق ناظم حیدرآباد کنور نوید جمیل کی جانب سے بھجوائے گئے ہیں۔

واضح رہے پی ایس پی کے سربراہ نے گزشتہ ماہ حیدرآباد کے علاقے پکا قلعہ میں ہونے والے اپنی جماعت کے پہلے جلسے میں حیدر آباد کے سابق ناظم اور موجودہ رکن قومی اسمبلی کنور نوید جمیل پر کرپشن سمیت بد عنوانی میں ملوث ہونے کے الزامات لگائے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں