site
stats
سندھ

گرفتاریوں کے خلاف ایم کیو ایم کے کارکنان کا شاہراہ فیصل پر احتجاج

کراچی:گلستان جوہر میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے چھاپے اور گرفتاریوں کے بعد عوام کی بڑی تعداد کا شاہراہ فیصل تھانے کے باہر اور سڑک پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گلستانِ جوہر میں ایم کیو ایم کے دفتر پر چھاپے کے دوران متعدد کارکنان کی گرفتاری کے خلاف علاقہ مکینوں اور کارکنان کی بڑی تعداد شاہراہ فیصل تھانے کے باہر جمع ہوئی اور احتجاج کیا۔

مظاہرین میں کارکنان سمیت گرفتار افراد کے اہل خانہ اور خواتین کی بڑی تعداد موجود ہے جس کے باعث شاہراہ فیصل پر جانے والے ٹریک پر ٹریفک کی روانی بند کردی گئی تھی، شاہراہ فیصل تھانے کے مظاہرین کی بڑی تعداد کو دیکھتے ہوئے پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی گئی تھی۔

احتجاج کے باعث شاہراہ فیصل اور راشد منہاس روڈ پر ٹریفک کی روانہ شدید متاثر ہوگئی تھی، ایس پی گلشن اقبال ڈاکٹر فہد کی جانب سے مظاہرین سے مذاکرات کی کوشش کی گئی تاہم مظاہرین نے گرفتار افراد کی رہائی تک دھرنا دینے کا اعلان کردیا ہے، جس کے باعث مذاکرات میں کوئی پیشرفت نہ ہوسکی۔

قبل ازیں قانون نافذ کرنے والے اداروں نے گلستان جوہر میں واقع ایم کیو ایم کے دفتر کا گھیراؤ کیا اور اس کے نیتجے میں بلدیاتی کونسلر سمیت  7 کارکنان کو گرفتار کر کے نامعلوم مقام پر منتقل کیا تھا، سرچ آپریشن کے دوران مخصوص فلیٹس کی تلاشی بھی لی گئی تھی۔

دوسری جانب کارکنان کی گرفتاریوں اور عوامی احتجاج کے بعد ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی لندن و پاکستان کا اہم اجلاس شروع ہوگیا ہے جس میں آئندہ کے لائحہ عمل پر غور کیا جائےگا۔

بعد ازاں ایم کیو ایم کے ڈپٹی کنونیئر کنور نوید جمیل کے مذاکرات کامیاب ہونے کے بعد احتجاج ختم کرنے کا اعلان کیا اور مظاہرین پر امن طور پر منتشر ہوگئے تھے۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top