The news is by your side.

Advertisement

احتجاجی دھرنا آئین اور قانون کی بالا دستی اور انصاف کیلئے دیا گیا ، فاروق ستار

کراچی: ایم کیو ایم نے لاپتہ کارکنان کی عدم بازیابی کے خلاف مزار قائد کے سامنے احتجاجی دھرنا اور شہداء کی یاد میں شمعیں روشن کیں، ڈاکٹر فاروق ستار کہتے ہیں کہ قانون نافذ کرنے والے ہماری حفاظت نہیں کرسکتے،تو ہمیں اپنے دفاع کرنے کی اجازت دی جائے۔

مزار قائد کے سامنے متحدہ نے لاپتہ کارکنوں اور شہداء کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا، دھرنے سے خطاب میں ایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار نے کہا کہ ایم کیو ایم کو دیوار سے لگا کر مسلح افراد کو کراچی پر قابض کیا جارہا ہے،پچاس سے زائد افراد ماورائے عدالت قتل، دو سو چالیس ٹارگٹ کلنگ کا شکار اور ایک سو پنتیس سے زائد تاحال لاپتہ ہیں۔

ڈاکٹر فاروق ستارکا کہنا تھا کہ قانون نافذ کرنے والے ہماری حفاظت نہیں کرسکتے،تو ہمیں اپنے دفاع کرنے کی اجازت دی جائے، ان کا کہنا تھا کہ آج کا احتجاجی دھرنا آئین اور قانون کی بالا دستی اور انصاف کے لیے دیا گیا ہے

اس موقع پر نامزد مئیر وسیم اختر نے کہا کہ حقیقی دہشت گردوں کے حوالے سے رینجرز اور پولیس کو آگاہ کر دیا ہے، آفتاب احمد اور پارٹی کے شہداء کی یاد میں مزار قائد کے سامنے شمعیں روشن کرکے انھیں خراج عقیدت پیش کیا گیا،رہنمائوں کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم نے بڑی عوامی تحریک کا آغاز کر دیا ہے۔

دوسری جانب ایم کیو ایم قائد نے پارٹی قیادت سے دستبرداری اور معاملات فاروق ستار کو دینے کا سوال کیا جسے کارکنوں نے مسترد کر دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں